فلم باربی 10 اگست کو عرب امارات میں نمائش کے لیے پیش کی جائے گی، بکنگ شروع

مقامی تھیٹر بشمول ووکس ،ریل اور روکسی سنیماؤں میں پیشگی بکنگ جاری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

متحدہ عرب امارات میں ہالی ووڈ فلم باربی کی نمائش متوقع ریلیز سے دو ہفتے قبل 10 اگست کو سینما گھروں میں شروع ہورہی ہے۔

مقامی تھیٹر بشمول ووکس ،ریل اور روکسی سنیماؤں میں پیشگی بکنگ جاری ہے۔

ملک میں اس کی ریلیز میں تاخیر کے پیش نظر فلم پر ممکنہ پابندی کے بارے میں ہفتوں سے جاری قیاس آرائیوں کے بعد متحدہ عرب امارات کی میڈیا کونسل نے

3 اگست کو فلم کو عوام کے دیکھنے کے لیے کلیئر کر دیا۔

"متحدہ عرب امارات کی میڈیا کونسل نے ایک بیان میں کہا کہ 'باربی' فلم کے لیے میڈیا مواد کے معیارات اور یو اے ای کی عمر کی درجہ بندی کے مطابق ضروری طریقہ کار مکمل کیا گیا ہے۔

مقامی تھیٹروں میں فلم کی آن لائن بکنگ میں واضح کیا گیا کہ یہ 15 سال سے زیادہ عمر کے ناظرین کے لیے ہے۔

اداکارہ مارگٹ روبی اور ریان گوسلنگ کی یہ فلم ابتدائی طور پر اس کی عالمی نمائش کی تاریخوں کے مطابق 20 جولائی کو ریلیز ہونے والی تھی۔ تاہم، جولائی میں، متحدہ عرب امارات میں تھیٹروں نے نمائش کی تاریخ کو تبدیل کر کے 31 اگست کر دیا، جس سے پابندی کی افواہیں پھیل گئیں۔تاہم ، حکام کی جانب سے تاخیر کی کوئی وجہ نہیں بتائی گئی۔

ہدایت کار گریٹا گیروِگ کی 'باربی' کرسٹوفر نولان کی اوپن ہائیمر کے ساتھ سال کی سب سے زیادہ متوقع فلموں میں سے ایک ہے۔

یہ فلم کے افتتاحی ہفتے کے آخر میں سب سے زیادہ کمائی کرنے والی کسی خاتون کی ہدایت کاری میں بننے والی پہلی فلم بن چکی ہے۔

میڈیا اینالیٹکس فرم "کوم سکور" کے مطابق یہ فلم 21 جولائی کو ریلیز کے بعد سے امریکہ اور کینیڈا میں 351 ملین ڈالر سے زیادہ اور عالمی سطح پر تقریباً 775 ملین ڈالر کما چکی ہے۔

متحدہ عرب امارات، دیگر جی سی سی ممالک کی طرح، فلموں کی نمائش پر پابندی لگاتا ہے اگر وہ ثقافتی اور مذہبی اصولوں سے متصادم ہوں۔

مثال کے طور پر، یو اے ای نے جون میں انتہائی متوقع "اسپائیڈر مین: ایکروسس دی اسپائیڈر ورس" کو ریلیز نہیں کیا، اور 2022 میں، اس نے والٹ ڈزنی پکچرز کی اینی میٹڈ فیچر فلم "لائٹ ایئر" میں ہم جنس کرداروں کی وجہ اس کی سنیما گھروں میں نمائش پر پابندی لگا دی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں