.

یمن: القاعدہ کے حملے میں 15 حوثی جنگجو ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے وسطی علاقے رداع میں اہل تشیع مسلک کے شدت پسند حوثی گروپ کے دو مراکز پر القاعدہ نواز گروپ انصار الشریعہ نے حملہ کر کے کم سے کم 15 حوثی جنگجو ہلاک کر دیے ہیں۔

العربیہ ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق یمن میں سرگرم القاعدہ کی ایک ذیلی تنظیم انصار الشریعہ کی جانب سے جاری ایک بیان میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ تنظیم کے عناصر نے رداع میں جبل احرم کے نشیبی علاقے حریہ میں قائم حوثیوں کے دو مراکز پر حملہ کے پندرہ حوثی عسکریت پسندوں کو ہلاک کر دیا ہے۔ بیان کے مطابق جوابی کارروائی میں القاعدہ کے متعدد جنگجو بھی زخمی ہوئے ہیں۔

ادھر ایک دوسری پیش رفت میں صنعاء میں طلباء اور اساتذہ نے پبلک پراسیکیوٹر کے دفتر کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے حوثی ملیشیا کے ہاتھوں اغواء کیے گئے طلبا اور اساتذہ کی فوری بازیابی کا مطالبہ کیا ہے۔

مظاہرین کا کہنا ہے کہ حوثیوں نے صنعاء میں ایک اسکول کے طلباء اور اساتذہ کو ولادت نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی مناسبت سے منعقدہ ایک محفل میں جبرا شریک کرنے کی کوشش کی تھی جس انہوں نے تقریب میں شرکت سے انکار کر دیا تھا۔ حوثیوں نے انکار پر کئی طلباء اوراساتذہ کو اغواء کرلیا تھا۔

اسکول کے طلباء اور اساتذہ کی جانب سے انکار کے بعد حوثیوں نے اسکول پر فائرنگ بھی کی اور تعلیمی سرگرمیوں کو روک دیا تھا۔