.

شاہ سلمان کی 64 سال پرانی تصویر میں نظر آنے والے ٹیلی فون کا قصّہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی ٹیلی کوم کمپنی کے چیف ایگزیکٹو ڈاکٹر خالد البیاری نے فرماں روا شاہ سلمان بن عبدالعزیز کو ایک یادگاری تحفہ پیش کیا۔ کنگ عبدالعزیز ہارس ریس چیمپین شپ سے متعلق سالانہ بڑے میلے کی تقریب کے دوران پیش کیا جانے والا یہ تحفہ اُس پرانے ٹیلی فون کا ماڈل ہے جو 1375 ہجری میں شاہ سلمان کی ایک تصویر میں نظر آ رہا ہے۔ شاہ سلمان اُس وقت ریاض کے گورنر تھے۔

شاہ سلمان کی مذکورہ پرانی تصویر میں نظر آنے والی ٹیلی فون کے حوالے سے دو اشیاء پیش کی گئیں۔ ان میں ایک تو خادم حرمین کی ریاض کے دفتر میں تصویر ہے جب کہ وہ ریاض کے گورنر تھے۔ دوسری چیز اُس ٹیلی فون سے ملتا جلتا ٹیلی فون سیٹ ہے جو 64 برس قبل ریاض کے گورنر کے زیر استعمال تھا۔

مملکت سعودی عرب میں پہلی مرتبہ ٹیلی فون کا داخلہ 1353 ہجری میں ہوا۔ اسی سال ریاض ، مکہ مکرمہ ، مدینہ منورہ ، جدہ اور طائف کے درمیان 854 ٹیلی فون لائنیں تقسیم کی گئیں۔

ڈاکٹر خالد البیاری نے العربیہ ڈاٹ نیٹ کو بتایا کہ یہ تصویر شاہ سلمان کے ریاض کے گورنر بننے کے دو برس بعد 1375 ہجری یعنی 1956ء میں ریاض کی بلدیہ کی عمارت میں لی گئی۔

البیاری نے مزید بتایا کہ یہ تصویر بھارتی وزیراعظم جواہر لال نہرو کے سعودی عرب کے دورے کے دوران بنائی گئی تھی۔

تصویر میں نظر آنے والا ٹیلی فون سیٹ پرانی طرز کا ہے۔ اُس وقت مملکت میں ٹیلی فون کے استعمال کے آغاز کو 22 برس گزر چکے تھے۔