.

ایران کے بعد حماس اور اسلامی جہاد کی جانب سے حزب اللہ کو بلیک لسٹ کرنے کی مذمت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران کے طرز عمل پر فلسطینی عسکری تنظیموں اسلامی تحریک مزاحمت 'حماس' اور اسلامی جہاد نے بھی جرمنی کی جانب سے لبنانی شیعہ ملیشیا حزب اللہ کو دہشت گرد تنظیم قرار دینے اور تنظیم کو بلیک لسٹ کرنے کی شدید مذمت کی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق دونوں فلسطینی تنظیموں نے جرمن وزارت داخلہ کے اس اعلان کی شدید مذمت کی ہے جس میں حزب اللہ کو ایک عالمی تخریب کار اور دہشت گرد تنظیم قرار دیا گیا ہے۔ حماس اور اسلامی جہاد نے جرمنی کے اقدام پر حزب اللہ کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے کہاہے کہ دونوں جماعتیں حزب اللہ کے موقف کے حامی ہیں۔

قبل ازیں ایران نے اپنی پرور دہ حزب اللہ کو جرمنی میں بلیک لسٹ کیے جانے کی شدید مذمت کی تھی۔ دو روز قبل جرمن حکومت نے حزب اللہ کو ایک غیرقانونی دہشت گرد گروہ قرار دیتے ہوئے اسے بلیک لسٹ کردیا تھا۔

ایران نے برلن حکومت کے اس فیصلے پر سخت رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ حزب اللہ کو دہشت گرد قرار دینا 'امریکی ۔ صہیونی' پروپیگنڈے کا حصہ ہے اور جرمنی کو اس فیصلے کے نتائج کا سامنا کرنا پڑے گا۔