.

سعودی عرب میں دی جانے والی کرونا ویکسین ہراعتبار سے محفوظ ہے: وزیر صحت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے وزیر صحت ڈاکٹر توفیق الربیعہ نے کہا ہے کہ مملکت میں شہریوں کو کرونا سے بچائو کے لیے لگائی جانے والی ویکسین کی تمام اقسام کسی منفی اثر اور سائیڈ افیکٹ سے محفوظ ہیں۔

ٹویٹر پر پوسٹ کردہ ایک ٹویٹ میں ڈاکٹر الربیعہ کا کہنا تھا کہ اللہ کا شکر ہے کہ کرونا ویکسین لگوائے جانے کے دو ہفتوں کے اندر اندر ہی شہریوں میں اس کے غیرمعمولی اثرات دیکھے جا رہے ہیں۔ مملکت میں دی جانے والی کرونا کی تمام ویکسینیں محفوظ ہیں۔انہوں‌ نے شہریوں‌پر زور دیا کہ وہ رضاکارانہ طور پر ویکسین لگوائیں تاکہ اس موذی وبا سے بچا جا سکے۔

ادھر سعودی عرب کی وزارت صحت کے ترجمان ڈاکٹر محمد العبدالعالی نے کہا ہے کہ وزارت صحت کی طرف سے وبا سے تحفظ کے لیے وضع کردہ قواعد وضوابط کی پابندی سے وبا پر قابو پانے میں مدد ملے گی اور اس کے بہترین نتائج سامنے آئیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ وزارت صحت مملکت میں کرونا وبا کی وجہ سے پیدا ہونے والی صورت حال پر نظر رکھے ہوئے ہے۔

انہوں نے بتایا کہ اب تک مملکت میں 1706455 افراد کو کرونا ویکسین لگوائی جا چکی ہے۔ وبا سے بچائو کے لیے ملک بھر میں 500 ویکسین مراکز قائم کیےگئے ہیں۔