بحرین اور قطر کا سفارتی تعلقات بحال کرنے کا فیصلہ

ریاض میں ’’بحرین قطر فالو اپ کمیٹی‘‘ کی ملاقات کے بعد اعلان کیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

بحرین اور قطر نے بدھ کے روز اقوام متحدہ کے چارٹر کے اصولوں اور 1961 کے سفارتی تعلقات سے متعلق ویانا معاہدے کی دفعات کے مطابق اپنے درمیان سفارتی تعلقات بحال کرنے کا فیصلہ کرلیا۔

دونوں فریقوں نے اس بات کی تصدیق کی کہ یہ قدم خلیج تعاون کونسل کے آئین کے مقاصد کے مطابق، اور ریاستوں کے درمیان مساوات کے اصولوں کے احترام کے تحت دو طرفہ تعلقات کو فروغ دینے اور خلیجی ملکوں کے اتحاد کو بڑھانے کی باہمی خواہش سے نکلا ہے۔ اس اہم اقدام کے تحت قومی خودمختاری اور آزادی، علاقائی سالمیت اور اچھی ہمسائیگی کے اصولوں کو بھی مد نظر رکھا گیا ہے۔

یہ بات ریاض میں خلیج تعاون کونسل کے جنرل سیکرٹریٹ کے ہیڈ کوارٹر میں ’’بحرین- قطر فالو اپ کمیٹی‘‘ کے دوسرے اجلاس کے دوران سامنے آئی۔ کمیٹی نے مشترکہ قانونی کمیٹی اور مشترکہ سلامتی کمیٹی دونوں کے پہلے اجلاس کے نتائج کا جائزہ لیا۔

اپنے اپنے ملک کے وفد کی سربراہی بحرین کی وزارت خارجہ کے سیاسی امور کے انڈر سیکرٹری الشيخ عبد الله بن أحمد آل خليفہ اور قطری وزارت خارجہ کے سیکرٹری جنرل ڈاکٹر احمد الحمادی کر رہے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں