اسرائیل کی غزہ پر بمباری اور سرحدی جھڑپیں، کئی فلسطینی زخمی

اسرائیلی فورسز نے سرحدی باڑ کے قریب مظاہرین پر براہ راست گولیاں برسا دیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

فلسطینی حکام کا کہنا تھا کہ غزہ اور اسرائیل کے درمیان سرحد پر جھڑپوں میں تین فلسطینی زخمی ہوگئے ہیں۔ دوسری طرف اسرائیلی فوج نے کہا ہے کہ اس نے غزہ کی پٹی میں حماس کے ٹھکانوں پر بمباری کی ہے۔

غزہ میں فلسطینی شہری علیحدگی کی باڑ پر نسبتاً پرسکون رہنے کے بعد آٹھ دنوں سے احتجاجی مظاہرے کر رہے ہیں۔ اسرائیلی فورسز نے ان پر براہ راست گولیاں برسائیں اور فلسطینی نوجوانوں نے اسرائیلی فورسز پر پتھراؤ اور دیسی ساختہ بم پھینکے۔

اسرائیلی فوج نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اس نے غزہ کی پٹی میں سکیورٹی سرحدوں سے ملحقہ حماس کے ٹھکانوں پر بمباری کی ہے۔ غزہ کے رہائشیوں کا کہنا ہے کہ یہ مظاہرے اسرائیلی جیلوں میں فلسطینی قیدیوں کے ساتھ ناروا سلوک اور مسجد اقصیٰ میں یہودیوں کے دھاوے اور دیگر مسائل کے خلاف احتجاج ہیں۔

اسرائیلی فوج کا کہنا ہے کہ مظاہرین نے آگ لگانے والے غبارے بھی اسرائیلی علاقے میں پھینکے ہیں جس سے باڑ کے قریب علاقوں میں آگ لگ گئی۔ فلسطینی وزارت صحت نے جمعہ کو کہا تھا کہ جھڑپوں کے دوران 31 فلسطینی زخمی ہوئے ہیں۔ یہ مظاہرے اسرائیلی فورسز کے ہاتھوں ایک فلسطینی کے جاں بحق ہونے کے چند روز بعد شروع ہوئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں