نائلہ کیانی نانگا پربت سر کرنے والی پہلی پاکستانی خاتون کوہ پیما بن گئیں

نائلہ واحد پاکستانی خاتون کوہ پیما ہیں جو دو سال کے عرصے میں 8 ہزار میٹر سے بلند 6 چوٹیاں سر کرنے کا اعزاز حاصل کر چکی ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

پاکستانی کوہ پیما نائلہ کیانی نے دنیا کی نویں بلند ترین چوٹی نانگا پربت کامیابی سے سر کر لی، نائلہ کیانی 8 ہزار میٹر سے زائد بلند سات چوٹیاں سر کرنے والی پہلی پاکستانی خاتون بن گئیں۔

نانگا پربت دنیا کے خطرناک ترین پہاڑوں میں سے ایک ہے جس کی اونچائی 8126 میٹر ہے، اسے قاتل پہاڑ کے نام سے بھی جانا جاتا ہے۔

اس حوالے سے کوہ پیما نائلہ کیانی کا کہنا تھا کہ اس مہم کے حوالے سے وہ تھوڑی خوفزدہ تھی تاہم پھر بھی اپنے اس مشن کو مکمل کرنے کی خاطر پرعزم تھی۔

نائلہ کیانی کی اس مہم میں BARD فاؤنڈیشن نے مکمل طور پر معاونت فراہم کی ہے، مینیجنگ ڈائریکٹر BARD فاؤنڈیشن مہرین داؤد نے کہا ہے کہ کوہ پیمائی میں خواتین کے لیے محدود مواقعوں کے باوجود نائلہ ایک بہترین مثال بن کر سامنے آئیں، ہم ایسے باصلاحیت افراد کی معاونت اور ہمت افزائی کرتے رہیں گے۔

نائلہ کیانی نے حال ہی میں دنیا کی بلند ترین چوٹی ماؤنٹ ایورسٹ سر کرکے تاریخ رقم کی تھی، نائلہ کیانی رواں سال 2023 میں ماؤنٹ ایورسٹ سر کرنے والی پہلی بین الاقوامی کوہ پیما ہیں ۔

نائلہ کیانی واحد پاکستانی خاتون کوہ پیما ہیں جو دو سال کے عرصے میں 8 ہزار میٹر سے بلند 6 چوٹیاں سر کرنے کا اعزاز حاصل کر چکی ہیں۔

انہوں نے گیشربرم 1، گیشربرم 2، کے ٹو اور اناپورنا کو بھی سر کر رکھا ہے، نائلہ کیانی اس سیزن میں ایورسٹ ٹاپ پر پہنچنے والی پہلی غیر نیپالی کوہ پیما بھی بن گئی ہیں، نائلہ کیانی اس سیزن میں ماؤنٹ لوٹسے بھی سر کریں گی۔

نائلہ کیانی کا تعلق صوبہ پنجاب میں راولپنڈی شہر کے علاقے گجر خان سے ہے، انھوں نے ایرو سپیس انجینئرنگ کی تعلیم برطانیہ سے حاصل کر کے اپنے اس شعبے میں بھی کام کر رکھا ہے ۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں