ملتان میں تین منزلہ عمارت گرنے سے نو افراد جاں بحق، دو شدید زخمی

وزیراعلیٰ پنجاب مریم نواز نے عمارت گرنے سے قیمتی جانوں کے ضیاع پر گہرے رنج و دکھ کا اظہار کیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ملتان میں تین منزلہ عمارت گرنے سے نو افراد ملبے تلے دب کر جاں بحق جبکہ دو شدید زخمی ہوگئے ہیں۔

افسوسناک واقعہ ملتان کے علاقے حرم گیٹ کے محلہ جوادیاں میں پیش آیا جہاں گھر میں موجود افراد پر اچانک تین منزلہ گھر کی چھت آ گری، عمارت گرنے سے ایک ہی خاندان کے سات افراد سمیت نو افراد جاں بحق ہو گئے جبکہ دو شدید زخمی ہوئے ہیں۔

جاں بحق افراد میں گھر کا سربراہ فہیم عباس، 40 سالہ اہلیہ صنوبر، 15 سالہ بیٹا دانش، 14 سالہ وسیم، 13 سالہ کومل اور بختاور، 12 سالہ امیر علی شامل ہیں۔

واقعے کی اطلاع ملنے کے بعد ریسکیو ٹیم موقع پر پہنچ گئی۔ ریسکیو اہلکاروں نے ملبہ ہٹا کر لاشوں اور زخمیوں کو نشتر ہسپتال منتقل کر دیا جہاں زخمی ہونے والوں کو طبی امداد دی جا رہی ہے۔

ریسکیو حکام نے مزید بتایا کہ ریسکیو آپریشن ڈسٹرکٹ ایمرجنسی آپریشن ڈاکٹر کلیم کی زیرِنگرانی کیا گیا، واقعہ کی اطلاع 15 پرپولیس کو دی گئی، مقامی پولیس موقع پر موجود ہے۔

ریسکیو حکام کا کہنا ہے کہ تین منزلہ عمارت دیگر مکانوں پر آ گری تھی، ملبے تلے 19 افراد دب گئے، تین گھنٹے کے ریسکیو آپریشن کے بعد نو افراد کی نعشیں نکال لی گئیں جبکہ دو زخمیوں کو بھی ریسکیو کر لیا گیا ہے۔

ڈپٹی کمشنر ملتان رضوان قدیرنے بھی موقع پر پہنچ کر ریسکیو آپریشن کا جائزہ لیا، چھت کا کچھ ملبہ ساتھ والے مکانوں پر بھی گرا جس کی وجہ سے مزید نقصان کا خدشہ ہے، ہسپتال میں ایمرجنسی نافذ کر دی گئی۔ انہوں نے بتایا کہ عمارت گرنے کے محرکات کی مکمل تحقیقات کروائی جائےگی، اطراف کی عمارتوں کی انسپکشن کےلیے ٹیکنِیکل ٹیم تشکیل دے دی۔

پولیس نے نو افراد کے جاں بحق ہونے کے واقعہ کا مقدمہ درج کر لیا۔

وزیر اعلیٰ پنجاب مریم نواز نے عمارت گرنے سے قیمتی جانوں کے ضیاع پر گہرے رنج و دکھ کا اظہار کیا اور کمشنر سے رپورٹ طلب کر لی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں