.

دبئی پولیس کا اماراتی کی بھنگ کی ''جدید'' نرسری پر چھاپا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

نت روز ایجادات کی بدولت زندگی کے ہر شعبے میں نئی نئی جدتیں آرہی ہیں اور لائی جارہی ہیں تو ایسے میں منشیات کا دھندا کیوں پیچھے رہتا۔جی ہاں! دبئی میں مقیم ایک اماراتی نے بھنگ کی کاشت کہیں کسی کھیت یا کھلی جگہ میں نہیں کی بلکہ اس نے اپنی تخلیقی صلاحیت کو بروئے کار لاتے ہوئے اپنے مکان میں گملوں میں بھنگ کے پودے اگا دیے ہیں۔

اس شخص نے اپنے گھر میں بھنگ کی کاشت کے لیے روشنی ،آب پاشی اور ہوا کا معقول بندوبست کررکھا تھا مگر اس کی یہ تمام محنت دھری کی دھری رہ گئی ہے۔دبئی پولیس نے اس کے ہاں چھاپا مار کر گملوں میں لگے بھنگ کے یہ تمام پودے برآمد کر لیے ہیں اور اس شخص کو گرفتار کر لیا ہے۔

پولیس نے چھاپے کی اس کارروائی کی دو منٹ کی ایک ویڈیو بھی جاری کی ہے۔اس مشتبہ شخص نے اپنی گرفتاری کے بعد دعویٰ کیا ہے کہ اس نے اپنے ذاتی استعمال کے لیے بھنگ کاشت کی تھی لیکن پولیس کو یقین ہے کہ اتنی زیادہ تعداد میں بھنگ کے پودے اُگانے کا ایک ہی مطلب ہوسکتا ہے کہ وہ اپنی اس فصل کو فروخت کرنا چاہتا تھا۔

خلیج ٹائمز کی ایک رپورٹ کے مطابق پولیس افسروں نے ایک اور اماراتی کے ولا میں چھاپا مار کارروائی کرکے بھنگ کے کئی درجن پودے برآمد کر لیے ہیں۔ پولیس کا کہنا ہے کہ اس شخص کے پاس یونیورسٹی کی متعدد ڈگریاں ہیں اور وہ ایک اچھی ملازمت کررہا ہے۔

واضح رہے کہ متحدہ عرب امارات اور اس کے ہمسایہ خلیجی عرب ممالک میں منشیات کے دھندے کی روک تھام کے لیے سخت قوانین نافذ ہیں اور کسی شخص کے قبضے سے غیر قانونی طور پر بھنگ ،چرس ،کوکین اور ہیروئین وغیرہ برآمد ہونے کی صورت میں اس کو کم سے کم چار سال قید کی سزا سنائی جاسکتی ہے۔