.

جاپان: لکڑی کے اسکائی اسکریپر کا منصوبہ، لاگت 5 ارب ڈالر سے زیادہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

جاپان کی سرزمین پر مستقبل میں ایک نئی فلک بوس عمارت کا ظہور ہونے والا ہے۔ یہ عمارت 70 منزلوں پر مشتمل ہو گی اور اس کی بلندی 350 میٹر جب کہ مجموعی رقبہ 4.55 لاکھ مربع میٹر ہو گا۔ یہ دیگر اسکائی اسکریپروں سے اس لحاظ سے مختلف ہو گی کہ اس کی 90% تعمیر لکڑی سے ہو گی جس کو طاقت ور فولاد کے ستونوں اور فریمز کے ساتھ جوڑا جائے گا۔ عمارت کی تعمیر 2041ء میں مکمل ہو گی۔

برطانوی اخبار "دی ٹائمز" کے مطابق اسکائی اسکریپر پر 600 ارب جاپانی ین یعنی 5.6 ارب امریکی ڈالر کی لاگت آئے گی۔ عمارت کی تعمیر میں مختلف نوعیت کی 65 لاکھ مربع فٹ لکڑی استعمال ہو گی۔

ابھی تک اس عمارت کا نام تجویز نہیں کیا گیا ہے جو دنیا بھر میں لکڑی سے بنی بلند ترین عمارت ہو گی۔

جاپانیوں سے قبل اپریل 2016 میں برطانیہ میں اعلان کیا گیا تھا کہ کیمبرج یونی ورسٹی کے انجینئروں کا گروپ لندن کے Barbican centre کے مقابل 300 میٹر بلند لکڑی کی ایک عمارت تعمیر کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔ یہ عمارت 93 ہزار مربع میٹر رقبے پر ہو گی۔ اس کی 80 منزلوں میں 1000 رہائش گاہیں ہوں گی۔

لنڈن ٹاور کے پُل کے بعد سب سے بلند اسکائی اسکریپر اور دنیا بھر میں لکڑی کی بلند ترین عمارت کے اس منصوبے کو ابھی تک منظوری نہیں ملی ہے۔

لکڑی کی بلند ترین عمارت اس وقت کینیڈا کے شہر وینکوور میں Brock Commons کے نام سے واقع ہے۔ طلبہ کے ہاسٹل کے طور پر استعمال ہو نے والی 18 منزلہ یہ عمارت 53 میٹر بلند ہے۔ اس کے بعد دوسری بلند ترین عمارت Treet ناروے کے شہر Bergen میں ہے۔ اس عمارت کی بلندی 49 میٹر ہے اور یہ 14 منزلوں پر مشتمل ہے۔