بصارت سے محروم سعودی فنکاروں کے تیارکردہ تجریدی آرٹ کے نمونوں کی پہلی نمائش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

نجران ادبی انجمن نے ’بصیرۃ‘ سوسائٹی کے تعاون سے اپنی نوعیت کی منفرد نمائش کا اہتمام کیا- تجریدی آرٹ کے فن پاروں کی نمائش کی گئی جس میں مملکت بھر سے خصوصی صلاحیت کے حامل ان فن کاروں کو شریک کیا گیا جو بصارت سے محروم تھے۔ نمائش کا افتتاح گورنر نجران شہزادہ جلوی بن عبدالعزیز بن مساعد نے کیا-

تفصیلات کے مطابق نمائش میں 12 فن کار شریک ہوئے- انہوں نے ایک طرف تو پہلے سے تیار فن پارے شائقین کے لیے سجائے تھے جبکہ دوسری جانب شائقین کے سامنے براہ راست بھی فن پارے تیار کیے-

تجریدی آرٹ کی مذکورہ نمائش میں ادارہ تعلیم، نجران یونیورسٹی، الاحفاد نجی سکولز، نابیناؤں کی خدمت کے لیے معروف سپیشلسٹ انجمنیں، شمعۃ امل انجمن، نور نجران وغیرہ سرکاری اور نیم سرکاری ادارے بھی شریک رہے-

ادبی ثقافتی انجمن کے صدر سعید آل مرضمہ نے بتایا کہ یہ نمائش مملکت ہی نہیں ادبی انجمنوں کی سطح پر بھی اپنی نوعیت کی پہلی ہے- کوشش کی گئی کہ نابینا فن کاروں کو اپنی تخلیقی صلاحیتیں اجاگر کرنے کا موقع فراہم کیا جائے-

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں