.

پولینڈ:یومِ فتح کی سالگرہ پرفوجی قبرستان میں روسی سفیر پر’’سرخ رنگ ‘‘سے حملہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پولینڈ میں متعیّن روسی سفیر سرگئی آندریف پر یوم فتح کی سالگرہ کے موقع پر وارسا میں سوویت فوجیوں کے یادگاری قبرستان میں پھول چڑھاتے ہوئے سرخ رنگ سے حملہ کیا گیا ہے۔

روس کی سرکاری خبررساں ایجنسی تاس کی رپورٹ کے مطابق روسی فیڈریشن کے سفیر، ان کی اہلیہ اور ان کے ساتھ آنے والے سفارت کاروں کے ایک گروپ پرسرخ رنگ سے چھڑکاؤ کیا گیا ہے اورانھیں فوجی یادگار پرجانے کی اجازت نہیں دی گئی۔

تاس کے مطابق روسی سفیر جب کار سے اترے توانھیں ایک مشتعل ہجوم نے گھیرلیا۔ یہ لوگ ان کی آمد سے قبل ہی یوکرینی پرچموں اور سرخ رنگ کی چادروں کے ساتھ اس یادگاری مقام پر جمع تھے اور وہ روس کے خلاف نعرے بازی کررہے تھے۔

رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ پھول لے کرفوجیوں کو خراجِ عقیدت پیش کرنے کے لیے قبرستان پہنچنے والے افراد شورمچا رہے تھے کہ روسی سفیر اور ان کے ساتھیوں کو سوویت فوجیوں کی یادگارپرپھول چڑھانے اور یومِ فتح منانے کا حق نہیں ہے۔اس کے بعد پولیس نے سفارت کاروں کواپنے حصار میں لے لیا اورگاڑی تک پہنچانے میں ان کی مدد کی۔

9مئی کوسابق سوویت یونین کی افواج کی نازی جرمنی کے خلاف دوسری عالمی جنگ میں جیت کی خوشی میں یوم فتح منایا جاتا ہے اور روسی عہدے دار اورسفیر فوجی یادگاروں پر پھول چڑھاتے اور نازی فوجیوں کے خلاف جنگ میں کام آنے والے سوویت فوجیوں کو خراجِ عقیدت پیش کرتے ہیں۔

یادرہے کہ 1945ء میں دوسری جنگ عظیم کے اختتام پر نازی جرمنی کو شکست ہوئی تھی۔روسی صدر ولادی میر پوتین نے سوویت یونین کی فتح کی یاد کو استعمال کرتے ہوئے اپنی فوج کو یوکرین میں جنگ جیتنے کی ترغیب دی ہے۔روس 24 فروری کو یوکرین میں شروع کیے گئے حملے کو اپنی خصوصی فوجی کارروائی قراردیتا ہے جس کا مقصد ملک کو نازی قوم پرستوں سے پاک کرنا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں