امارات کی ایمریٹس ایئر لائن کو ’گمراہ کن‘ بزنس کلاس اشتہار پر جرمانہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

نیوزی لینڈ کی عدالت نے متحدہ عرب امارات کی فضائی کمپنی ایمریٹس کو اپنی بزنس کلاس پرواز کے "گمراہ کن" اشتہارات پر جرمانہ عائد کیا ہے۔

تنازعات کے حل کے لیے قائم ٹریبونل کی طرف سے کیا گیا یہ فیصلہ ایئر لائنز کے لیے پرواز کے تجربات کو فروغ دینے کے طریقے میں ایک مثال قائم کرتا ہے۔

اماراتی ائیر لائن کو نیوزی لینڈ کے رہائشی مارک مورگن کو 8,440 ڈالر ادا کرنے کا حکم دیا گیا ہے جنہوں نے ایمریٹس کو نیوزی لینڈ میں اپنی خدمات کی غلط تشہیر کے لیے چیلنج کیا تھا۔

مورگن نے دعویٰ کیا کہ انہوں نے اپنی اہلیہ کے ساتھ نیوزی لینڈ سے برطانیہ سفر کے لیے بزنس کلاس کا ٹکٹ خریدنے سے پہلے فلیٹ بیڈ سیٹوں کے اشتہارات دیکھے جن میں منی بارز اور جدید ترین تفریحی نظام موجود تھے۔

تاہم، وعدہ شدہ پروڈکٹ کے بجائے مورگن کی پرواز 300-777 ای آر تھی جس میں سب سے پرانی بزنس کلاس پروڈکٹ تھی۔

ان نشستوں میں منی بارز نہیں ہیں اور نہ ہی یہ مکمل طور پر فلیٹ ہیں۔ مورگن نے استدلال کیا کہ یہ جھوٹا اشتہار تھا، کیونکہ ایمریٹس اصل میں اس پروڈکٹ کی تشہیر نہیں کرتا جو وہ دراصل نیوزی لینڈ کو پیش کرتا ہے۔

ایمریٹس نے دعویٰ کیا کہ اسے آپریشنل ضروریات کی وجہ سے مخصوص روٹس پر چلنے والے طیاروں کی قسم میں ترمیم کرنے کا حق حاصل ہے، کیونکہ اس کے کسٹمر کنٹریکٹ کے تحت طیاروں کی قسم کی ضمانت نہیں دی جاتی۔

مزید برآں، ایئر لائن کا موقف ہے کہ اسے اس مخصوص طیارے کو اپنے نیوزی لینڈ کے راستے کے لیے استعمال کرنا چاہیے کیونکہ یہ فی الحال غیر منافع بخش ہے۔

ڈسپیوٹ ٹربیونل کی ریفری لورا مولر نے مسافروں کا ساتھ دیتے ہوئے فیصلہ کیا کہ "یہ ایسی سروس کی تشہیر کا نتیجہ تھا جو وہ شاذ ونادر ہی فراہم کر رہے تھے، ایسا آپریشنل ضروریات کی وجہ سے ہوائی جہاز کی کبھی کبھار یا ایک بار کی تبدیلی کی وجہ سے نہیں ہے۔"

انہوں نے کہا کہ "پروموشنل مواد ایک تازہ ترین/نئی بزنس کلاس سیٹ اور سروس پر مبنی تھا جو ایمریٹس کے نیوزی لینڈ جانے والے پرانے طیارے میں موجود نہیں ہے۔"

"فیئر ٹریڈنگ ایکٹ 1986 تجارت میں گمراہ کن اور فریب کارانہ طرز عمل سے منع کرتا ہے۔ ایک ایسی سروس کی تشہیر جس کے بارے میں ایمریٹس کو معلوم تھا کہ اس کی فراہمی کا امکان نہیں ہے، گمراہ کن اور فریب ہے۔"

ایمریٹس نے دعویٰ کیا کہ پیش کردہ سروس کے معیار میں صرف 5 فیصد کمی تھی جس کی تشہیر کی گئی تھی اور اس نے 484 ڈالر کی واپسی کی پیشکش کی۔

تاہم، مورگن نے ٹکٹ کی رقم سے جزوی واپسی کے ساتھ ساتھ فرسٹ کلاس میں سفر کے لیے ادا کی گئی قیمت کی واپسی کا مطالبہ بھی کیا۔

ڈسپیوٹ ٹربیونل نے ائیر لائن کو 8,440 ڈالر واپس کرنے کا حکم دیا ہے۔

اس فیصلے سے دنیا بھر کی ایئر لائنز کے مصنوعات کی تشہیر کے طریقہ کار پر کئی سوال اٹھتے ہیں۔ بہت سی ایئر لائنز اپنی تازہ ترین اور بہترین مصنوعات کی تشہیر کرتی ہیں، لیکن انہیں صرف منتخب راستوں یا پروازوں پر مہیا کرتی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں