مونٹی نیگرو میں ’’ سست ترین شہری‘‘ کا خطاب جیتنے کا مقابلہ جاری

فکاہیہ مقابلہ جیتنے والے کو ایک ہزار یورو انعام دیا جائے گا، مقابلہ ہر سال منعقد کیا جاتا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شمالی مونٹی نیگرو کے ایک چھٹی گزارنے کے لیے مخصوص تفریحی مقام میں سالانہ منعقد ہونے والے طنزیہ مقابلے میں 7 افراد شریک ہیں۔ یہ ساتوں سابقہ ریکارڈ کو توڑنے کے بعد ’’سست ترین شہری‘‘ کے خطاب پانے کے لیے مقابلہ کر رہے ہیں۔ مقابلہ کے دوران ساتوں حریف گدوں پر لیٹے ہوئے ہیں۔

پچھلا ریکارڈ 117 گھنٹے کا تھا اور یہ گزشتہ سال کے مقابلے میں قائم کیا گیا تھا۔ یہ مقابلہ بریزنا ریزورٹ میں منعقد ہوا تھا۔ اس سال کا مقابلہ جمعرات کو 20 ویں دن میں داخل ہوچکا۔ مقابلہ کرنے والوں نے کہا ہے کہ وہ تساہل پسندی کا مقابلہ جاری رکھنے کے لیے پرعزم ہیں۔

2021 کی سست ترین قرار پانے والی خاتون ڈوبراوکا اکسیک نے کہا ہم سب بہترین محسوس کر رہے ہیں۔ ہمیں صحت کا کوئی مسئلہ نہیں ہے۔ ہمیں بس لیٹنا ہوتا ہے۔

مقابلے کی منتظم اور ریزورٹ کی مالک خاتون ریڈونیا بلاگوجیوک نے کہا یہ مقابلہ 12 سال قبل بحیرہ ایڈریاٹک کے چھوٹے سے ملک میں شروع کیا گیا تھا تاکہ ایک مشہور افسانہ کا مذاق اڑایا جا سکے جس میں مونٹینیگرینز کو کاہل قرار دیا گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ 21 ابتدائی مقابلہ کرنے والوں میں سے باقی سات اب تک 463 گھنٹے تک لیٹے ہوئے ہیں۔

مقابلہ کے قوانین میں کہا گیا ہے کہ کھڑا ہونا یا بیٹھنا خلاف ورزی شمار ہوگا اور ایسا کرنے والے کو فوری طور پر مقابلہ سے باہر کردیا جائے گا۔ تاہم مقابلہ کرنے والوں کو ہر آٹھ گھنٹے میں دس منٹ کے لیے بیت الخلا جانے کی اجازت ہے۔ مقابلہ کرنے والے موبائل فون اور لیپ ٹاپ استعمال بھی کر سکتے ہیں۔

پہلی مرتبہ اس مقابلہ میں شریک شمالی قصبے موجکوواک سے تعلق رکھنے والے 23 سالہ فلپ کنیزویک نے کہا کہ میں ایک ہزار یورو کا انعام جیتنے کے لیے پر اعتماد ہوں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں