مستعار جوتے پہن کر میراتھن کے عالمی ریکارڈ قائم کرنے والا کار حادثے میں ہلاک

کینیا کے چوبیس سالہ کیلون کیپٹم نے اکتوبر میں شکاگو میراتھن میں دو گھنٹے اور 35 سیکنڈ کے وقت کے ساتھ عالمی ریکارڈ قائم کیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

میراتھن کے موجودہ عالمی ریکارڈ ہولڈر کیولن کیپٹم اور ان کے کوچ کیرویس ہاکیزیمانا کینیا کے ایلڈورٹ شہر رفٹ ویلی میں اتوار کے روز ایک سڑک حادثے میں ہلاک ہو گئے۔

کینیا کی پولیس نے کیولن کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ کینیائی ایتھلیٹ ٹویوٹا پریمیو چلا رہے تھے، ان کے کوچ بھی ان کے ساتھ تھے اور جائے حادثہ پر ہی ان کی موت ہو گئی۔

چوبیس سالہ کیلون کیپٹم نے اکتوبر میں شکاگو میراتھن میں 42 کلومیٹر کی دوری دو گھنٹے اور 35 سیکنڈ کے وقت کے ساتھ طے کرکے عالمی ریکارڈ قائم کیا تھا۔ انہوں نے اپنے ہم وطن ایلیوڈ کیچوگے سن 2022 میں برلن میں بنائے گئے ریکارڈ کو توڑ دیا تھا۔ کیپشوگے نے یہ دوری دو گھنٹے ایک منٹ اور نو سیکنڈ میں طے کی تھی۔

کیپٹم کینیا کے اس علاقے سے تعلق رکھتے تھے جس نے لمبی دوری کی دوڑ میں شہرت حاصل کرنے والے ملک کو کئی نامور ایتھلیٹ دیے ہیں۔ کیپٹم نے اپنے بین الاقوامی کیریئر کا آغاز سن 2019 میں ہاف میراتھن سرکٹ سے کیا۔

انہوں نے پہلی مرتبہ ویلنسیا میراتھن میں سن 2022 میں حصہ لیا اور 42.195 کلومیٹر کی دوری کو دو گھنٹے ایک منٹ 53 سیکنڈ میں طے کر کے دھماکے دار آغاز کیا۔ اس وقت یہ چوتھی سب سے تیز رفتار ٹائمنگ تھی۔

اس دوڑ نے میراتھن میں ان کے مخصوص لائحہ عمل کو بھی اجاگر کیا، جس میں پہلے تیس کلومیٹر تک نسبتاً دھیرے دھیرے دوڑنا اور پھر سب سے آگے نکل جانا شامل تھا۔

انہوں نے اسی لائحہ عمل کا استعمال کرتے ہوئے اپریل میں لندن میراتھن جیتا اور پھر شکاگو میں ایلیوڈ کیچوگے کے ریکارڈ کو توڑا۔

دو بچوں کے باپ کیپٹم کا عروج انتہائی تیزی سے ہوا۔ انہوں سے صرف دو سال قبل پہلی مرتبہ مکمل میراتھن دوڑ میں حصہ لیا تھا۔

انہوں نے اپنا پہلے اہم مقابلے میں چار سال قبل ادھار لیے گئے جوتے پہن کر حصہ لیا تھا، اس وقت ان کے پاس جوتے خریدنے کے لیے پیسے بھی نہیں تھے۔

وہ کینیا کے ایتھلیٹس کی اس نئی پود سے تعلق رکھتے تھے جس نے ماضی کی روایات کے برخلاف اپنے کیریئر کا آغاز سڑک پر دوڑ نے کے ساتھ شروع کیا ہے۔

کیپٹم نے گذشتہ سال ایک انٹرویو میں کہا تھا کہ انہوں نے یہ غیر معمولی انتخاب صرف وسائل کی کمی کی وجہ سے کیا تھا۔"کیونکہ میرے پاس کھیل کے میدانوں تک پہنچنے کے لیے سفر کے پیسے بھی نہیں تھے۔ "

کینیا کے صدر ولیم روٹو نے کیلون کیپٹم کو اپنا مستقبل اور ’غیر معمولی کھلاڑی‘ قرار دیتے ہوئے سوشل میڈیا پلیٹ فارم ایکس پر جاری اپنے بیان میں کہا کہ ’وہ دنیا کے بہترین کھلاڑیوں میں سے ایک تھے جنہوں تمام رکارٹوں کو توڑتے ہوئے میراتھن ریکارڈ بنایا۔

کیلون کیپٹم کی موت کینیا کے نوجوان ایتھلیٹکس کی موت کے ’پراسرار‘ سانحات کی تازہ ترین مثال ہے، 2008 میں بیجنگ اولمپکس میں اولمپک ٹائٹل اپنے نام کرنے والے کینیا کے میراتھن سپر اسٹار سیموئل وانجیرو 2011 میں اتنی ہی عمر میں انتقال کر گئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں