مسجد حرام میں عارضہ قلب کا شکار ہونے والے پاکستانی حاجی کو بچا لیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

دو روز قبل مسجد حرام میں نماز ادا کرنے کے لیے آنے والے ایک ایرانی حاجی کو اچانک سینے میں تکلیف ہوئی مگر بروقت طبی امداد ملنے کے باعث اس کی زندگی بچالی گئی۔ گذشتہ روز ایک پاکستانی حاجی مسجد حرام میں نماز ادا کررہے تھے وہ بھی اچانک عارضہ قلب کا شکار ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق حج کے لیے آئے پاکستانی شہری کو مسجد حرام میں نماز ادا کرتے ہوئے سینے میں تکلیف شروع ہوئی۔ ان کے دل کی دھڑکن بڑھ گئی۔

سعودی عرب کی وزارت صحت نے بتایا کہ مکہ مکرمہ ہیلتھ کلسٹر کے رُکن کنگ عبداللہ میڈیکل سٹی میں ہارٹ سنٹر نے عارضہ قلب کا شکار ہونے والے حاجی کا معائنہ کیا۔اس کے دل کی دھڑکن بہت تیز تھی۔ تمام ضروری معائنے کرنے کے بعد فوری طور پر تشخیصی کیتھیٹر کیا گیا۔ ایکس رے کے نتائج میں دل کے پٹھوں میں شدید کمزوری ظاہر ہوئی۔ طبی ٹیم نے دل کے پٹھوں کو اچانک کارڈیک گرفت سے بچانے اور دل کی دھڑکن کو منظم کرنے کے لیے ایک شاک ڈیوائس لگائی۔ یہ ٹیک ڈیوائسز دل کی حفاظت کرتی ہیں اور خادم حرمین شریفین کی حکومت کی طرف سے مریض حاجیوں کو مفت فراہم کی جاتی ہے۔

محکمہ صحت نے بتایا کہ مریض کو تمام ضروری طبی امداد فراہم کرنے کے بعد اس کی جان بچالی لی ہے۔ تاہم ابھی اس کی طبی حالت پرنظر رکھی جا رہی ہے۔ بہتر ہونے کی صورت میں اسے مناسک حج ادا کرنے کی اجازت دی جائے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں