حج سیزن

فرائض میں کوتاہی کی پاداش میں حرمین انتظامیہ کے دو اعلیٰ عہدیدار برطرف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

السمجد الحرام اور المسجد النبویﷺ سے متعلق امور کے عمومی صدر نشین الشیخ ڈاکٹر عبدالرحمن بن عبدالعزیز السدیس نے سعی جنرل مینجمنٹ کے ڈائریکٹر جنرل اور ان کے نائب کو فرائض منصبی کی ادائیگی میں کوتاہی کے الزام میں ان کے عہدوں سے ہٹا دیا ہے۔

دونوں حکام المسجد الحرام میں انتہائی رش کے موقع پر ضیوف الرحمن کی آمد کے وقت اپنی ذمہ داری کما حقہ ادا کرنے میں ناکام رہے تھے۔

ڈاکٹر السدیس نے بتایا کہ عمومی صدارت برائے امور حرمین شریفین اللہ کے مہمانوں کی خدمت گاری میں کسی قسم کی کمی کو برداشت نہیں کرے گی۔ حرمین شریفین کی ویب سائٹ کے مطابق انہوں نے تمام متعلقہ عمال پر زور دیا کہ وہ محنت اور شوق سے اپنے فرائض انجام دیں۔

انہوں نے واضح کیا کہ عمومی صدارت حرمین شریفین قیادت کی امنگوں کے مطابق ضیوف الرحمن کو بہترین اور اعلی معیار کی خدمات فراہمی کے لیے کوشاں ہے۔

ڈاکٹر السدیس نے عبدالحفيظ الثبيتی کو سعی کی جنرل مینجمنٹ کے ڈائریکٹر جنرل جبکہ سامي السويهری کو ان کا نائب بھی مقرر کرنے کا حکم دیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اس فیصلے کا مقصد اولی الامر کی خواہشات اور امنگوں کے مطابق نوجوان قیادت کو حجاج کی خدمت کا موقع دینا ہے۔

ڈاکٹر عبدالرحمن السدیس نے کہا کہ ہماری پوری کوشش ہے کہ رواں برس حج سیزن کے دوران اپنی مثالی تیاریوں اور ممکنہ طور پر انتہائی صلاحیت کو بروئے لاتے ہوئے حاجیوں کو ایسی ایمانی فضا کی فراہمی یقینی بنا سکیں جس میں وہ اپنے مناسک بہترین انداز میں ادا کر سکیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں