.

الجزائری صدر فرانس میں زیر علاج رہنے کے بعد وطن واپس

عارضہ قلب میں مبتلا عبدالعزیز بوتفلیقہ بدستور آرام کریں گے: ایوان صدر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

الجزائر کے صدر عبدالعزیز بوتفلیقہ فرانس میں قریباً تین ماہ تک زیرعلاج رہنے کے بعد وطن واپس پہنچ گئے ہیں۔

الجزائری ایوان صدر نے منگل کو ایک بیان میں کہا ہے کہ ''وہ (صدر) اپنی بحالی کے لیے بدستور آرام کریں گے''سرکاری خبررساں ایجنسی اے پی ایس سے جاری کردہ اس بیان میں یہ نہیں بتایا گیا کہ صدر کب اپنی ذمے داریاں سنبھال لیں گے۔

الجزائر کے سرکاری ٹیلی ویژن نے صدر عبدالعزیز بوتفلیقہ کی فرانس سے واپسی کے بعد کی کوئی فوٹیج نشر نہیں کی ہے۔قبل ازیں انھیں بارہ جون کو الجزائری وزیراعظم اور مسلح افواج کے سربراہ سے پیرس کے اسپتال میں ملاقات کرتے ہوئے دکھایا گیا تھا۔

واضح رہے کہ الجزائری صدر 27 اپریل سے پیرس کے ایک اسپتال میں زیرعلاج تھے۔انھیں دل کا دورہ پڑنے کے بعد فرانس منتقل کیا گیا تھا۔اس دوران یہ اطلاع بھی سامنے آئی تھی کہ انھیں قومے کی حالت میں وطن واپس لایا گیا تھا۔الجزائری حکومت نے صدر بوتفلیقہ کی صحت بگڑنے سے متعلق رپورٹس شائع کرنے پر دو اخبارات کو سنسر کردیا تھا۔

دونوں اخبارات کے مینجنگ ایڈیٹر ہشام عبود نے فرانسیسی میڈیکل ذرائع اور الجزائری صدر کے عزیز واقارب کے حوالے سے ان کی بگڑتی ہوئی صحت سے متعلق یہ رپورٹ دی تھی لیکن تب الجزائری حکومت نے اس رپورٹ کی سختی سے تردید کردی تھی۔