.

"کرین حادثے کے باوجود حج معمول کے مطابق ہو گا"

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے ایک اعلیٰ عہدے دار نے کہا ہے کہ مسجد الحرام میں کرین گرنے کے حادثے کے باوجود حج معمول کے مطابق ہوگا۔ اس حادثے میں ایک سو سے زیادہ عازمین حج جاں بحق ہوگئے ہیں۔

اس سعودی عہدے دار نے اپنی شناخت ظاہر کیے بغیر کہا ہے کہ ''کرین کا حادثہ حج پر اثر انداز نہیں ہوگا اور مسجد الحرام کے متاثرہ حصوں کی آیندہ چند روز میں مرمت کردی جائے گی۔حج کے مناسک واعمال یقینی طور پر معمول کے مطابق جاری رہیں گے''۔

جمعہ کے روز شدید آندھی کی وجہ سے تعمیراتی کام میں استعمال ہونے والی ایک بڑی کرین مسجد الحرام کے صحن میں گر گئی تھی جس کے نتیجے میں وہاں موجود ایک سو سات افراد جاں بحق اور دو سو اڑتیس زخمی ہوگئے تھے۔زخمیوں میں سینتالیس پاکستانی بھی شامل ہیں۔

واضح رہے کہ حج کی ادائی کے لیے دنیا بھر سے قریباً آٹھ لاکھ فرزندان توحید مکہ مکرمہ پہنچ چکے ہیں۔مناسکِ حج کا آغاز اکیس ستمبر کو متوقع ہے۔