.

ریفرنڈم کی ناکامی پر اطالوی وزیراعظم مستعفی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اٹلی میں وزیراعظم ماتیو رینزی نے آئین میں اصلاحات کے اپنے مجوزہ پلان کی عوامی ریفرنڈم میں ناکامی کے بعد اپنے عہدے سے استعفیٰ دینے کا اعلان کیا ہے۔

گذشتہ شب رات گئے ایک نیوز کانفرنس میں انھوں نے اپنے فیصلے کا اعلان کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ وہ اس نتیجے کی مکمل ذمہ داری لیتے ہوئے اپنا عہدہ چھوڑ رہے ہیں تاہم اصلاحات کے مخالفین کو اب واضح تجاویز پیش کرنی ہوں گی۔

ریاستی براڈ کاسٹر 'آر اے آئی' کے ایگزٹ پول مطابق اصلاحات کی حمایت میں 42-46 فیصد ووٹ ڈالے گئے جبکہ ان کی مخالفت میں 54-58 فیصد ووٹ ڈالے گئے۔ ریفرنڈم میں ووٹوں کی گنتی جاری ہے تاہم ابتدائی نتائج میں اصلاحات کی حمایت کرنے والوں کو ایگزٹ پولز کے مقابلے میں زیادہ بڑی شکست کا سامنا ہے۔

وزیراعظم ماتیو رینزی نے اپنی نیوز کانفرنس میں کہا کہ وہ پیر کی دوپہر وہ اپنی کابینہ کے اجلاس میں اراکین کو آگاہ کر کے صدر کے پاس اپنا استعفیٰ جمع کروا دیں گے۔

ماتیو رینزی ڈھائی سال تک اٹلی کے وزیراعظم رہے ہیں۔ توقع کی جا رہی ہے کہ صدر ان سے کہیں گے کہ وہ کم از کم آئندہ ماہ تک اپنی ذمہ داریاں نبھائیں جب تک پارلیمان اس سال کا بجٹ منظور نہیں کر لیتی۔