ایران : بحری مشقوں کے دوران ناصر اور دہلویہ میزائلوں کے تجربات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ایران کی بحریہ نے خلیج میں فوجی مشقوں کے دوران سوموار کے روز ناصر اور دہلویہ میزائلوں کی جدید اقسام کے تجربات کیے ہیں۔

ایران کی فارس نیوز ایجنسی کے مطابق وزیر دفاع حسین دہقاں نے بتایا ہے کہ ’’جدید کروز میزائل ناصر کا ملک کے جنوبی پانیوں میں ولایت 95 بحری مشقوں کے دوران میں تجربہ کیا گیا ہے‘‘۔

انھوں نے کہا ہے کہ اس میزائل نے کامیابی سے اپنے ہدف کو نشانہ بنایا ہے۔خبررساں ایجنسی تسنیم کے مطابق لیزر گائیڈڈ دہلویہ میزائل کا بھی کامیابی سے تجربہ کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ سنہ 2012ء میں یہ اطلاع دی گئی تھی کہ ایران نے روس کے ٹینک شکن میزائل کی بنیاد پر دہلویہ میزائل تیار کیا ہے۔تاہم ایرانی میڈیا نے ان دونوں میزائلوں کی جدید اقسام کی رینج (مار کرنے کی صلاحیت) کے بارے میں کچھ نہیں بتایا ہے۔

ایرانی بحریہ نے اتوار کو تزویراتی اہمیت کی حامل آبنائے ہرمز کے نزدیک سالانہ فوجی مشقیں شروع کی تھیں۔یہ خلیج اومان اور بحرہند میں بیس لاکھ مربع کلومیٹر کے علاقے میں ایک ہفتے تک جاری رہیں گی۔امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے اقتدار سنبھالنے کے بعد ایران کی یہ پہلی فوجی مشقیں ہیں۔ان میں ایران کی ایلیٹ پاسداران انقلاب کور کے بحری دستے شریک نہیں ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں