.

قبطی گرجا گھروں کے حملہ آور بمبار کون تھے؟ جانئے!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اتوار کے روز مصر کے قبطی گرجا گھروں پر حملے کرنے والے دونوں خودکش بمباروں کی شناخت ہو گئی ہے۔ العربیہ ٹی وی کے نامہ نگار کے مطابق ابو اسحاق اسکندریہ اور ابو البراء المصری نے طنطا کے گرجا گھر میں خود کو دھماکے سے اڑایا۔

تفصیلات کے مطابق ابو اسحاق المصری مبینہ طور پر اسکندریہ کے گرجا گھر میں دھماکے کا ذمہ دار ہے۔ کامرس گریجویٹ ابو اسحاق ستمبر 1990 میں منیا القمح میں پیدا ہوا۔

چار مہینوں تک کویت میں بطور اکائونٹنٹ کام کرنے کے بعد ابو اسحاق المصری ترکی کے راستے دسمبر 2013ء میں شام چلا گیا۔ کچھ عرصے کے بعد وہ مصر کے علاقے سیناء میں واپس آگیا۔

طنطا کے گرجا گھر میں حملے کے ذمہ دار شخص کی شناخت ابو البراء المصری کے نام سے کی گئی جو کہ 13 دسمبر 1974 کو کفر الشیخ کے قصبے ابوطبل میں پیدا ہوا۔

اس نے سیکنڈری سکول درحے کا صنعتی ڈپلومہ حاصل کر رکھا تھا۔ ابوالبراء شادی شدہ اور تین بچوں کا باپ تھا۔ وہ بھی اگست 2013 میں لبنان کے راستے سے شام داخل ہوا تھا۔

مصر کے قبطی عیسائیوں کے مقدس دن "پام سنڈے" کے موقع پر دو خودکش دھماکوں کے نتیجے میں کم از کم 44 افراد ہلاک جبکہ 100 سے زائد زخمی ہو گئے تھے۔

داعش نے "اعماق" نامی نیوز ایجنسی کے ذریعے سے ان حملوں کی ذمہ داری قبول کی ہے۔