.

ملیے سابق بھارتی وزیر دفاع سے، جن کے ہیں شوق نرالے!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سابق بھارتی وزیر دفاع منوہر پاریکر کو بچوں کے عالمی دن کے حوالے سے منعقدہ ایک تقریب میں اسکول کے بچوں کے سوالوں کا جواب دینا مہنگا پڑ گیا۔

سوالات کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وہ اپنے دور جوانی میں سگے بھائی اوودھوت کے ہمراہ ایسی فلمیں دیکھا کرتے تھے جو متنازع مواد سے بھرپور ہوتیں تھیں۔

بھارتی ریاست گوا کے وزیر اعلیٰ اور سابق وزیر دفاع منوہر پاریکر نے اعتراف کیا ہے کہ وہ اپنی جوانی کے دور میں فحش فلمیں دیکھنے سنیما گھر جایا کرتے تھے۔

وزیراعلیٰ نے کہا کہ ایک بار سینما میں رنگے ہاتھوں پکڑے جانے کے خوف سے وہ وہاں سے بھاگ نکلے لیکن ہم بھائیوں کو یقین تھا کہ سب کچھ ہماری والدہ کو بتا دیا جائے گااور ہماری درگت بنے گی لہٰذا ہم نے والدہ کو خود ہی بتا دیا کہ ہم فلم دیکھنے گئے تھے جس کچھ ایسے سین بھی شامل تھے، جو دیکھنے کے قابل نہیں تھے۔