.

شمالی اور جنوبی کوریا کے سربراہان کے درمیان تاریخی ملاقات میں یہ کھانے پیش ہوں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

جنوبی کوریا کے ایوانِ صدارت بلیو ہاؤس کے مطابق آئندہ جمعے کے روز جنوبی کوریا کے صدر مون جائے اِن سے ملاقات کے موقع پر توقع ہے کہ شمالی کوریا کے سربراہ کِم یونگ اُن سوئس کھانوں سے لطف اندوز ہوں گے۔ یہ سربراہ ملاقات دونوں ملکوں کے درمیان سرحد پر ہو گی۔

معروف سوئس ڈش Rosti جو تلے ہوئے آلوؤں پر مشتمل ہوتی ہے اسے جنوبی کوریائی ٹوسٹ کے ساتھ پیش کیا جائے گا۔ شمالی کوریا کے سربراہ نے تعلیم حاصل کرنے کے دوران اپنا بچپن سوئٹزرلینڈ میں گزارا تھا۔ لہذا روسٹی کی ڈش ان کی بچپن کی یادیں تازہ کر دے گی۔

اس کے علاوہ دیگر کھانوں میں جنوبی کوریا کی اسپیشل ڈش John Dory فِش اور شمالی کوریا کے دارالحکومت پیونگ یانگ کی ترکیب سے ٹھنڈی نوڈلز (گوشت کے ساتھ) بھی شامل ہیں۔

بلیو ہاؤس کے ترجمان کے مطابق جنوبی کوریا کے صدر مون جائے اِن نے ٹھنڈی نوڈلز کی ڈش پیونگ یانگ کے ریستوران اوکیریو گوان سے طلب کی ہے جو شمالی کوریا کا مشہور ترین ریستوران شمار کیا جاتا ہے۔ اس ڈش کو شمالی کوریا کی آمادگی کے بعد کھانوں کی فہرست میں شامل کیا گیا۔ اس ڈش کی تیاری کے لیے مزکورہ ریستوران کا ہیڈ شیف سفر کر کے دونوں رہ نماؤں کی ملاقات کی جگہ کے نزدیک سرحدی گاؤں پہنچیں گے اور وہاں یہ ڈش تیار کریں گے۔

اس تاریخی سربراہ ملاقات میں دونوں ممالک میں دستیاب مختلف نوعیت کے خصوصی مشروبات بھی پیش کیے جائیں گے۔