.

جنوبی افغانستان میں طالبان سے ایرانی اسلحہ برآمد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

افغان حکام کا کہنا ہے کہ ایرانی رجیم تحریک طالبان کے جنگجوؤں کو اسلحہ اور جنگی سازو سامان فراہم کرنے کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہے۔

’العربیہ ڈاٹ نیٹ‘ کے مطابق افغان فوج کے بریگیڈ 215 کے سربراہ ولی محمد احمد زئی نے بتایا کہ پاکستان اور ایران سے متصل ہلمند اور نیمروز میں سرگرم طالبان کے قبضے سے ایرانی اسلحہ قبضے میں لیا گیا ہے۔

اُنہوں نے مزید کہا کہ ایران طالبان تحریک کے جنگجوؤں کو اسلحہ اور فنڈز مہیا کررہا ہے تاکہ وہ ملک کے دوسرے علاقوں میں افراتفری پھیلا سکیں۔ جنرل احمد زئی کا کہنا تھا کہ افغان طالبان نے اپنے زیرکنٹرول علاقوں سے باہر جنگ بندی کی خلاف ورزیاں شروع کردی ہیں۔

ادھر نیمروز صوبے میں متعین بریگیڈ چار کے سربراہ بریگیڈیئر اصحاب الدین روشن نے الزام عاید کیا کہ ایران براہ راست افغانستان کے اندرونی معاملات میں مداخلت کررہا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ایران طالبان جنگجوؤں کو اسلحہ، بارودی سرنگیں اور دیگر خطرناک جنگی ہتھیار مہیا کررہا ہے۔ حال ہی میں فوج نے طالبان کے خلاف آپریشن کے دوران ان کے قبضے سے ایرانی اسلحہ قبضے میں لیا اور اس حوالے سے تفصیلی رپورٹ کابل بھجوائی گئی ہے۔