عرب اتحاد کے فضائی حملے میں صنعاء کے ہوائی اڈے سے ملحق حوثیوں کا ائیر بیس تباہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

عرب اتحاد نے ایک فضائی حملے میں یمن کے دارالحکومت صنعاء کے بین الاقوامی ہوائی اڈے کے نزدیک حوثی ملیشیا کے ایک ائیربیس کو تباہ کردیا ہے۔

عرب اتحاد نے بدھ کو ایک بیان میں کہا ہے کہ اس کے لڑاکا طیاروں نے صنعاء کے بین الاقوامی ہوائی اڈے سے ملحقہ حوثیوں کے ائیر بیس کو نشانہ بنایا ہے او ر ان کے ایک راکٹ لانچر اور ایک ڈرون کو تباہ کردیا ہے۔تباہ شدہ ڈرون حملے کے لیے اڑان بھرنے کی تیاری کررہا تھا۔

اس نے واضح کیا ہے کہ یہ فضائی حملہ بین الاقوامی انسانی قانون اور فوجی کارروائی کے قواعد وضوابط کے مطابق کیا گیا ہے اور تمام پیشگی حفاظتی احتیاطی تدابیر اختیار کی گئی تھیں۔

اتحاد کا کہنا ہے کہ حوثی ملیشیا صنعاء کے بین الاقوامی ائیرپورٹ کو ایک فوجی اڈے کے طور پر استعمال کررہی ہے اور یہ بین الاقوامی انسانی قانون کی ننگی خلاف ورزی ہے۔

ادھر ساحلی شہر الحدیدہ میں حوثی ملیشیا نے سوموار کی شب سے سویڈن میں طے شدہ جنگ بندی کے سمجھوتے کی 21 خلاف ورزیاں کی ہیں اور ایسے اشارے ملے ہیں کہ وہ اس سمجھوتے کو یکسر نظر انداز کررہی ہے۔

عرب اتحاد کے ایک ذریعے نے اپنی شناخت ظاہر نہ کرنے کی شرط پر کہا ہے کہ ’’اس مرحلے پر ہم حتی الامکان ضبط وتحمل کا مظاہرہ کریں گے لیکن حوثیوں کی طرف سے ملنے والے ابتدائی اشاریے کوئی حوصلہ افزا نہیں ہیں‘‘۔جنگ بندی سمجھوتے پر عمل درآمد کے آغاز کے بعد سے الحدیدہ میں گذشتہ چند ماہ سے جاری شدید لڑائی رک گئی ہے۔

اس نے اقوام متحدہ سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ الحدیدہ شہر اور اس کے نواح سے حوثی ملیشیا کی فورسز کے انخلا کی نگرانی کے لیے جلد سے جلد افسروں کو تعینات کرے۔اس نے خبردار کیا ہے کہ جنگ بندی کا سمجھوتا ٹوٹ سکتا ہے۔ایک اطلاع کے مطابق ایک ڈچ جنرل کے زیر قیادت اقوام متحدہ کی ایک ٹیم کی اسی ہفتے کسی وقت الحدیدہ آمد متوقع ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں