.

الحدیدہ میں فائر بندی کی نگرانی کے لیے یو این مبصر جنرل کرسٹوفر یمن میں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ہالینڈ سے تعلق رکھنے والے جنرل پیٹرک کرسٹوفر آج ہفتے کے روز یمن کے عارضی دارالحکومت عدن پہنچ رہے ہیں جہاں وہ اقوام متحدہ کی طرف سے اپنے مشن کے سلسلے میں یمنی حکومت کے عہدے داران سے ملاقات کریں گے۔

ذرائع کے مطابق جنرل پیٹرک اردن کے دارالحکومت عمّان سے روانہ ہو کر عدن پہنچیں گے۔ اس کے بعد وہ صنعاء کا رخ کریں گے اور باغی حوثی ملیشیا کے ارکان سے ملاقات کریں گے۔

جنرل پیٹرک ہفتے کی سہ پہر الحدیدہ شہر پہنچیں گے۔ وہ اقوام متحدہ کی جانب سے تحفظ اور یمن میں عرب اتحاد سے رابطہ کاری کے ساتھ فائر بندی کے حوالے سے معاہدے کی نگرانی کے مشن کا آغاز کریں گے۔

اس سے قبل یمنی حکومت یہ اعلان کر چکی ہے کہ وہ سویڈن معاہدے کے تحت فائر بندی کے اطلاق کی پاسداری کرے گی۔

عرب اتحاد کے اعلان کے مطابق گزشتہ 72 گھنٹوں کے دوران حوثیوں نے فائر بندی کے سمجھوتے کی 62 خلاف ورزیاں کیں۔ اس دوران الدریہمی، التحیتا، الفازہ، حیس، الحالی، الجبلیہ، الجاح، الجراحی، الحدیدہ، المنظر، المکمنیہ اور الصالح کے علاقوں پر مارٹر گولوں، آر پی جی گرینیڈز، کیٹوشیا راکٹ اور بیلسٹک میزائلوں سمیت تمام ہتھیاروں کا استعمال کیا گیا۔