.

فرانس: احتجاج کی نئی لہر کا سامنا کرنے کے لیے 4100 سکیورٹی اہل کار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فرانس میں حکام "زرد صدریوں" کے احتجاجی سلسلے کی چھٹی لہر کا سامنا کرنے کے لیے چاک چوبند ہوگئے ہیں۔ تاہم سکیورٹی اداروں نے توقع ظاہر کی ہے کہ گزشتہ ہفتوں کے لحاظ سے اس مرتبہ احتجاج کنندگان کی شرکت کمزور رہے گی۔

فرانسیسی اخبار Le Journal du Dimanche کے مطابق پولیس نے آج ہفتے کے روز ہونے والی احتجاج پر کنٹرول حاصل کرنے کے لیے مختلف شہروں میں 4100 کے قریب اہل کاروں کو اکٹھا کیا ہے جب کہ گذشتہ ہفتے یہ تعداد 10 ہزار تھی۔

اخبار نے فرانسیسی وزارت داخلہ کے ایک ذمے دار کے حوالے سے بتایا ہے کہ مظاہرین کی تعداد میں کمی متوقع ہونے کے باوجود احتجاج کے دوران پرتشدد واقعات رُونما ہونے کے اندیشے کے سبب پولیس ہائی الرٹ رہے گی۔ ذمے دار کے مطابق سب سے زیادہ نفری پیرس میں ہے جہاں 1250 پولیس اہل کار موجود ہیں۔ ان اہل کاروں کو 12 بکتر بند گاڑیوں کی معاونت حاصل ہے۔

فرانس میں "زرد صدری" تحریک کے دوران چھٹا "ہفتہ" آنے کے موقع پر حکام نے سخت حفاظتی اقدامات کیے ہیں۔ اگرچہ حکومت کی جانب سے احتجاج کنندگان کے مطالبات کا مثبت جواب دینے کے واسطے اقدامات کیے جا رہے ہیں تاہم بعض کے نزدیک یہ ناکافی ہیں۔ مذکورہ اقدامات پر عمل درامد کا آغاز آئندہ ماہ کی ابتدا سے ہو گا۔ یہ اقدامات ہنگامی طور پر جمعرات اور جمعے کے روز پارلیمنٹ اور سینیٹ میں زیر بحث لائے گئے تھے۔