.

کانگریس کا ٹرمپ ۔ پوتین ملاقات کے ترجمان کوطلب کرنے پرغور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے حریف ملک روس کے ساتھ مبینہ تعاون کی خبروں کے جلو میں امریکی ٹیلی ویژن نیٹ ورک"س این این" نے دعویٰ کیا ہے کہ کانگریس صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور ان کے روسی ہم منصب ولادی میر پوتین کے درمیان ہونے والی ملاقات کے ترجمان کو طلب کرنے پرغورکررہی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق امریکی صدر نے ذرائع ابلاغ میں آنے والی ان رپورٹس کو مسترد کردیا ہے جن میں روسی صدرکے ساتھ ہونے والی ملاقات میں ان کے ساتھ تعاون کی یقین دلایا گیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ مجھے روسی مفادات کا بالکل کوئی علم نہیں اور نہ ہی مجھے ترجمے کے بارے میں کوئی بات یاد ہے۔

وائیٹ ہائوس سے نیو اورلیانز روانہ روانگی سے قبل اخبار"واشنگٹن پوسٹ" سے بات کرتے ہوئے انہوں‌ نے کہا کہ میں نے پوتین کے ساتھ ہونے والی ملاقات کی تفصیلات مخفی رکھیں مگر کانگریس نے ترجمے کی ریکارڈنگ ضبط کی۔ وہ ایک جھوٹی رپورٹ تھی۔

خیال رہے کہ اخبار"نیویارک ٹائمز" نے اپنی رپورٹ میں بتایا ہے کہ "ایف بی آئی" اس بات کی تحقیقات کررہی ہے کہ آیا صدر ٹرمپ نے روس کے مفادات کے لیے کام کیا ہے یا نہیں۔

جب کہ صدر ٹرمپ کا کہنا ہے کہ مجھے علم نہیں کہ میں‌نے روس کے مفادات کے لیے کوئی کام کیا ہے۔ رپورٹس نے ڈیموکریٹس اور ری پبلیکنز دونوں کو صدر ٹرمپ کے حوالے سے سخت مایوس اور بد ظن کیا ہے۔