.

سوئس حکومت نے لبنانی فوج کو اسلحہ کی فراہمی کیوں روک دی؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سوئٹرزلینڈ کی حکومت نے لبنانی فوج کو اسلحہ اور دیگر فوجی ساز و سامان روکنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ بیروت کو اس وقت تک کسی قسم کا اسلحہ مہیا نہیں کیا جاسکتا جب تک اس بات کی ضمانت نہ دی جائے کہ وہ اسلحہ کسی دوسرے گروپ کے ہاتھ نہیں لگے گا۔

خبر رساں اداروں کے مطابق سوئٹرزلینڈ حکومت کے اسٹیٹ سیکرٹیریٹ کے اقتصادی امور شعبے کے طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ لبنانی فوج کو ملنے والے اسلحہ اور فوجی سازمان کے تحفظ کے لیے نگرانی کی ضرورت ہے جب تک اسلحہ محفوظ ہاتھوں میں رہنے کی یقین دہانی نہیں ہوجاتی اس وقت تک ہم کسی قسم کا فوجی سامان مہیا نہیں کریں گے۔

رپورٹ کے مطابق سنہ 2016ء کو لبنان کو 10 مشین گنیں اور 30 کلاشنکوفیں فراہم کی گئی تھیں۔ مارچ 2018ء کے دوران پتا چلا کہ لبنانی فوج کے پاس اس میں سے صرف 9 ہتھیار ہیں باقی کا کوئی پتا نہیں۔

بیروت میں سوئس سفارت خانے کی مدد سے لبنانی فوج کو دیئے گئے اسلحہ کے بارے میں پتا چلایا گیا تو معلوم ہوا کہ 31 مختلف ہتھیار غائب ہیں۔