.

وینزویلا کے جنگی طیارے کا عالمی فضائی حدود میں امریکی جہاز کا 'جارحانہ تعاقب'

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی حکام نے بتایا ہے کہ وینز ویلا کے ایک جنگی طیارے نے امریکی انٹیلی جنس طیارے کا بحیرۂ کیریبین کے علاقے میں عالمی فضائی حدود میں پرواز کے دوران 'جارحانہ' انداز میں تعاقب کیا۔ یہ واقعہ دونوں ملکوں کے درمیان جاری کشیدگی میں اضافے کا واضح ثبوت بتایا جا رہا ہے۔

امریکی فوج کی جنوبی کمان کی طرف سے اتوار کو جاری ایک بیان میں بتایا گیا کہ عالمی فضائی حدود میں وینزویلا کے جنگی طیارے کا ہمارے جہاز کا پچھا کرنا وینزویلا کے صدر نیکولس مادورو کے باغیانہ طرز عمل کا کھلا ثبوت ہے۔ وینزویلا، امریکا پر بین الاقوامی قوانین کو پامال کرنے کا الزام عاید کرتا ہے مگر اس کے طیارے عالمی فضائی حدود میں بھی امریکی طیاروں کا پیچھا کرتے ہیں۔

امریکی حکام کا کہنا ہے کہ امریکا کا ایک طیارہ'اے بی ۔ 3'، جو متعدد نوعیت کے مشن پر تھا، کا عالمی فضائی حدود سے گذرتے ہوئے وینزویلا کے 'سو۔ 30' طیارے نے تعاقب کیا۔ امریکا اس اقدام کو وینزویلا کی طرف سے جہاز اور اس کے عملے کو خطرے میں ڈالنے کی کوشش قرار دیتا ہے۔

دوسری طرف وینزویلا کے وزیر دفاع ولادی میر باڈرینو لوبیز نے دعویٰ کیا گیا ہے کہ امریکا ایک جنگی جہاز کسی پیشگی اطلاع کے بغیر وینزویلا کی فضائی حدود میں گھس آیا تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ امریکی جہاز نے وینزویلا کے مرکزی ہوائی اڈے کی کمرشل پروازوں کو خطرے میں‌ ڈال دیا تھا۔