.

چین میں کرونا سے مزید 44 اموات ، ایک دن میں متاثرہ افراد کی کم ترین تعداد ریکارڈ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

چین میں کرونا وائرس سے مزید 44 افراد موت کے منہ میں چلے گئے۔ اس کے علاوہ مہلک وائرس کے 327 نئے کیس سامنے آئے ہیں۔ یہ ایک ماہ سے زیادہ عرصے سے پھیلے ہوئے وائرس سے ایک دن میں متاثرہ افراد کی سب سے کم تعداد ہے۔

چین میں نیشنل ہیلتھ کمیشن نے جمعے کے روز بتایا ہے کہ ملک میں کرونا وائرس کے نتیجے میں واقع ہونے والی اموات کی مجموعی تعداد 2788 ہو گئی ہے۔

عالمی ادارہ صحت W.H.O کے ڈائریکٹر جنرل ٹیڈروس ایڈہینوم گیبریسوس نے جمعرات کے روز اعلان کیا تھا کہ متعدی وائرس کرونا عالمی سطح پر "فیصلہ کن نقطے" پر پہنچ چکا ہے۔ انہوں نے اس وبا کی لپیٹ میں آنے والے ممالک پر زور دیا کہ وہ اس پر قابو پانے کے لیے "جلد حرکت" میں آئیں۔ جنیوا میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے گیبریسوس کا کہنا تھا کہ "اس وقت بقیہ دنیا میں جو کچھ ہو رہا ہے وہ ہمارے لیے بڑی تشویش کا باعث ہے"۔

ادھر جنوبی کوریا میں جمعے کے روز صحت سے متعلق حکام نے کرونا وائرس کے مزید 256 کیس ریکارڈ کیے جانے کا اعلان کیا ہے۔ اس طرح چین کے بعد کرونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والے ملک میں اس مہلک وائرس کے کیسوں کی مجموعی تعداد 2022 ہو گئی۔

جنوبی کوریا میں کرونا کے زیادہ تر کیس ڈائیگو شہر میں ریکارڈ کیے گئے۔ یہ ملک میں اس مہلک وائرس کا گڑھ شمار کیا جا رہا ہے۔ جنوبی کوریا میں اب تک کرونا سے واقع ہونے والی اموات کی تعداد 13 ہے۔

دوسری جانب جاپان میں کرونا وائرس کے پھیلاؤ پر کنٹرول میں مدد کے لیے ملک میں تمام اسکولوں کو بند کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔ جاپانی وزیراعظم شنزو آبے کے مطابق انہوں نے مارچ کے اواخر میں موسم بہار کی تعطیلات شروع ہونے تک تمام پرائمری، سیکنڈری اور ہائی اسکولوں کو بند کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔