.

اطالیہ: کچھوے کو سیر کرانے کے لیے نکلنے والی خاتون پر جرمانہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اطالیہ میں ایک 60 سالہ مقامی خاتون کو سیر و تفریح کی پاداش میں 400 یورو جرمانے کا سامنا کرنا پڑا۔ یہ خاتون پیر کے روز دارالحکومت روم کی سڑکوں پر اپنے ایک چھوٹے سے کچھوے کے ساتھ گھوم پھر رہی تھی کہ اس دوران سیکورٹی فورسز کے اہل کاروں نے اسے دھر لیا۔

سیکورٹی فورس کے میڈیا بیورو کی جانب سے جاری بیان میں بتایا گیا کہ مذکورہ خاتون بنا کسی قانونی جواز کے اپنے گھر سے باہر چہل قدمی کر رہی تھی۔ یہ شہر میں کرونا وائرس کی روک تھام کے لیے نافذ قرنطینہ کو چیلنج کرنے کے مترادف ہے۔

خاتون نے اپنے اس عمل کا منفرد جواز پیش کرتے ہوئے کہا کہ وہ اپنے کچھوے کا دل بہلانے کے واسطے گھر سے نکلی تھی۔

تاہم سیکورٹی اہل کار اس خاتون کی جانب سے پیش کیے گئے جواز سے مطمئن اور قائل نہ ہوئے۔ انہوں نے خاتون کے خلاف 400 یورو کا جرمانے کا چالان درج کر لیا۔

واضح رہے کہ پیر کو اطالیہ میں عام تعطیل تھی۔ اس روز ریکارڈ تعداد میں جرمانوں کے چالانوں کا اندراج دیکھا گیا۔ ملک بھر میں پولیس نے 252148 کارروائیاں انجام دیں جن میں 16545 کا تعلق نقل و حرکت پر عائد پابندی کی خلاف ورزیوں کی مد میں جرمانوں سے تھا۔ جرمانوں کی یہ تعداد اتوار کے روزایسٹر کے موقع پر درج ہونے والے چالانوں کے مقابلے میں 20.2% زیادہ ہے۔