.

کووِڈ-19: ابوظبی پورٹس کا ویکسین کی سات کروڑ خوراکیں ذخیرہ اورتقسیم کرنے کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ابوظبی پورٹس نے کرونا وائرس کی ویکسین کی سات کروڑ خوراکیں ذخیرہ اور تقسیم کرنے کا اعلان کیا ہے۔اس کا کہنا ہے کہ کووِڈ-19 کے خلاف جنگ میں وہ اہم کردار اد اکررہی ہے۔

ابوظبی پورٹس نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’اس کا خلیفہ انڈسٹریل زون ابوظبی (کزاڈ)میں 19 ہزار مربع میٹر پر مشتمل گودام ہے جہاں کنٹرول درجہ حرارت کے تحت ادویہ کو رکھاجاسکتا ہے۔اس میں پہلے ہی ویکسین کی دس لاکھ سے زیادہ بوتلیں موجود ہیں۔‘‘

اس پریس ریلیزمیں بتایا گیا ہے کہ اس گودام میں 2 سے 8 ڈگری درجہ حرارت تک ادویہ کو رکھنے کی صلاحیت موجود ہے۔اس کے علاوہ 80 ڈگری کے انتہائی درجہ حرارت تک ادویہ کو رکھنے کی صلاحیت بھی ہے۔اس کو ایک کنٹرول ڈیش بورڈ کے ذریعے ڈیجیٹل مانیٹر کیا جاسکتا ہے۔

ابوظبی پورٹس کے چیف ایگزیکٹو آفیسر (سی ای او) کیپٹن جمعہ الشمسی کا کہنا ہے کہ ’’ابو ظبی پورٹس اس انتہائی حساس پراڈکٹ کو ذخیرہ اور تقسیم کرنے کے عمل اور سپلائی چین میں اہم قائدانہ کردار ادا کرسکتا ہے۔‘‘

ابوظبی نے گذشتہ ہفتے یہ اعلان کیا تھا کہ کرونا وائرس کی ویکسین لگوانے والے مسافروں کو بیرون ملک سے امارت میں لوٹنے کی صورت میں قرنطین کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔

یو اے ای میں چین کی دوا ساز کمپنی سائنو فارم کی تیار کردہ ویکسین کی تیسرے مرحلے میں جانچ کی گئی ہے اور یہ تیس ہزار رضاکار شرکاء کو لگائی گئی ہے۔اس کے بعد امارات کی حکومت نے اس ویکسین کو قومی ویکسی نیشن پروگرام کے تحت ہنگامی بنیاد پر لگانے کی منظوری دی تھی ۔اب طِبّی عملہ کے ارکان اور کووِڈ-19 کے خلاف جنگ میں محاذ اوّل پر لڑنے والے دوسرے محکموں کے کارکنان کو ترجیحی بنیادوں پر یہ ویکسین لگائی جارہی ہے۔