.
لیبیا تنازع

اقوام متحدہ کا لیبیا سے اجرتی جنگجوؤں کی فوری واپسی کا مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اقوام متحدہ اور لیبیا کی مشترکہ عسکری کمیٹی نے ملک میں موجود غیرملکی اجرتی جنگجوؤں کی فوری واپسی کا مطالبہ کیا ہے۔

لیبیا میں اقوام متحدہ کے مندوب یان کوبیچ نے لیبیا میں سیاسی کشیدگی ختم کرنے کے لیے قائم کردہ مشترکہ فوجی کمیٹی (5 + 5) کےارکان سے بات چیت میں مشرقی اور مغربی لیبیا کو ملانے والی ساحلی سڑک کھولنے میں تاخیر پر عدم اطمینان کا اظہار کیا ہے۔

لیبیا میں اقوام متحدہ کے مندوب یان کوبیچ
لیبیا میں اقوام متحدہ کے مندوب یان کوبیچ

لیبیا میں اقوام متحدہ کے امن مشن نے ایک بیان میں کہا ہے کہ مسٹرکوبیچ اور مشترکہ ملٹری کمیٹی (5 + 5) نے تصدیق کی ہے کہ فوجیوں ، غیر ملکی جنگجوؤں اور غیر ملکی افواج کی واپسی کو مزید تاخیر کے بغیر شروع ہونا چاہئیے۔

انہوں نے مزید کہا کہ کوبیچ نے مشترکہ فوجی کمیٹی کے ساتھ اسلحے سے پاک لیبیا، آباد کاری ، دوبارہ تنظیم اور سیکیورٹی کے شعبے میں اصلاحات کے لیے قومی منصوبہ تیار کرنے کے لیے ضروری اقدامات پر تبادلہ خیال کیا۔

لیبیا میں‌متحارب فریقین کی طرف سے قائم کردہ '5 + 5' مشترکہ ملٹری کمیٹی نے منگل کی شام اپنے اجلاس میں توسیع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اجلاس آج سے شروع ہوگا اور اگلے جمعرات تک جاری رہےگا۔ اجلاس میں مشرقی اور مغربی لیبیا کو ملانے والی شاہراہ کھولنے ، غیرملکی عسکریت پسندوں کی واپسی اور زیرالتوا دیگر امور پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔