.

چینی ہیکروں پر اسرائیل کی وسیع پیمانے پر جاسوسی مہم کا الزام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی سائبرسیکیوریٹی کمپنی ’فائر ای‘ نے چینی گروپ UNC215 پر اسرائیلی اداروں کے خلاف بڑے پیمانے پر جاسوسی مہم شروع کرنے کا الزام عائد کیا ہے۔

’فائر ای‘ نے وضاحت کی کہ سائبر اور جاسوسی حملوں میں اسرائیلی حکومتی اداروں ، انفارمیشن ٹیکنالوجی فراہم کرنے والی کمپنیوں اور ٹیلی کمیونیکیشن کمپنیوں کو نشانہ بنایا اور یہ مہم یکم جنوری 2019 میں شروع کی گئی تھی۔

’فائر ای نے مزید کہا کہ گروپ نے اسرائیل سے شبہات کو دور کرنے کے لیے ان حملوں کو ایران سے منسوب کرنے کی کوشش کی۔

’یو این سی 215‘ نے مہم میں نئے حربے ، تکنیک اور طریقہ کار استعمال کیے جن میں کسی قابل اعتماد تیسرے فریق کا استحصال کرنا اور تجزیہ کاروں کو گمراہ کرنے کے لیے جھوٹے اشتہارات لگانا شامل ہے۔

’فائر ای‘ نے جاسوسی کی کارروائیوں میں براہ راست چینی حکومت کو مورد الزام نہیں ٹھہرایا لیکن اس نے زور دیا کہ یہ مہم اور اس کے اہداف چین کے مفادات کے مطابق ہیں۔