گمنام افراد کے لیے عطیات سے دہشت گردی کی فنڈنگ بڑھ سکتی ہے: سعودی اسٹیٹ سیکورٹی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب میں ریاستی سیکورٹی کی پریذیڈنسی نے غیر اجازت یافتہ عناصر کے لیے عطیات سے خبردار کیا ہے۔ ادارے نے واضح کیا کہ نامعلوم عناصر کے لیے عطیات دینے سے دہشت گردی کی فنڈنگ کا امکان بڑھ جاتا ہے۔

آج منگل کے روز اسٹیٹ سیکورٹی نے اپنے سرکاری ٹویٹر اکاؤنٹ پر بیان میں نامعلوم عناصر کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ "یہ لوگ آپ کے گمان سے زیادہ خطرناک ہو سکتے ہیں ، لہذا اپنے عطیات صرف اجازت یافتہ اداروں کے ذریعے دیجیے"۔

اسی طرح اسٹیٹ سیکورٹی پریذیڈنسی نے ایک وڈیو کلپ جاری کیا جس میں بعض گداگروں کی جانب سے مالی رقوم حاصل کرنے کے واسطے دھوکے کو عیاں کیا گیا ہے۔

پبلک سیکورٹی ڈپارٹمنٹ کی جانب سے جاری ایک بیان میں زور دیا گیا ہے کہ عطیات کو ملکی نظام کے تحت وسائل کے ذریعے دیا جائے۔ مملکت نے گذشتہ برس انٹرنیٹ پر "احسان" کے نام سے ایک پلیٹ فارم متعارف کرایا تھا۔ یہ پلیٹ فارم عطیات دینے کے خواہش مند افراد کو اسمارٹ فون میں "احسان" کی ایپ کے ذریعے موقع فراہم کرتا ہے۔

یاد رہے کہ مملکت میں گداگردی کے انسداد کے نظام نے رواں سال جنوری میں کام شروع کیا تھا۔ اس نظام کے تحت گداگری اختیار کرنے والے یا گداگری پر اکسانے والے یا کسی بھی صورت میں گداگری میں معاونت کرنے والے کسی بھی شخص کو پکڑے جانے کی صورت میں ایک سال تک کی جیل کی سزا یا ایک لاکھ ریال تک جرمانے کی سزا اور یا پھر دونوں سزائیں دی جا سکیں گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں