شامی تارکِ وطن زیک طحان نے نیویارک سب وے پر فائرنگ کے ملزم کو کیسے پکڑا؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شام سے تعلق رکھنے والے ایک 21 سالہ نوجوان نے نیویارک شہر میں قانون نافذ کرنے والے اداروں کے حکام کو فائرنگ کے مشتبہ ملزم فرینک جیمز کو پکڑنے میں مدد دی ہے۔اس مشتبہ شخص نے منگل کو نیویارک کے علاقے بروکلین میں ایک سب وے اسٹیشن پر فائرنگ کی تھی۔

زیک طحان نے بتایا کہ وہ مین ہٹن کے مشرقی گاؤں میں واقع سینٹ مارکس پلیس اور فرسٹ ایونیو کے قریب ایک دکان پرسیکورٹی کاکام کر رہا تھا۔اس دوران میں اس نے کیمروں پرایک شخص کو چلتے ہوئے دیکھا،اس کا چہرہ بشرہ جیمز کی تصاویر سے میل کھاتا تھا اور وہ اس وقت تک سب وے اسٹیشن پر فائرنگ کا مشتبہ ملزم تھا۔

اس کے بہ قول:’’میں نے سوچا،’اے میرے خدا، یہ وہ لڑکا ہے، ہمیں اسے حاصل کرنے کی ضرورت ہے۔وہ سڑک پر چل رہا تھا، میں نے پولیس کی ایک گاڑی کو دیکھا اور انھیں:’’ یہ لڑکا ہے، ہم اسے پکڑتے ہیں‘‘۔

شامی تارک وطن مشتبہ ملزم جیمز کی گرفتاری کی اطلاعات سامنے آنے کے بعد جائے وقوعہ پرپہنچنے والے صحافیوں کوتفصیل بتارہے تھے۔صحافیوں نے انھیں تفصیل جاننے کے لیے گھیر رکھا تھا۔

جیمز کو بدھ کے روز نیویارک سٹی میں سب وے کار کے اندر دھواں چھوڑنے والا بم نصب کرنے اور فائرنگ کے شُبے میں گرفتار کیا گیا تھا۔اس کے حملے میں منگل کے روز 23 افراد زخمی ہوئے تھے۔

جیمزنے صبح مسافروں کے رش کے وقت سب وے اسٹیشن پر حملہ کیا تھا اور اس کی گرفتاری فائرنگ کے 30 گھنٹے کے بعد عمل میں آئی تھی۔ میئرایرک ایڈمز نے اس کی گرفتاری کا اعلان کرتے ہوئے ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ ’’میرے ساتھی نیویارک کے لوگو! ہم نے اسے پکڑ لیاہے۔ ہم اس شہر کے لوگوں کی حفاظت کریں گے اور ان لوگوں کو پکڑیں گے جو سمجھتے ہیں کہ وہ نیویارک کے مکینوں کو دہشت زدہ کرسکتے ہیں‘‘۔

نیویارک پولیس ڈیپارٹمنٹ (این وائی پی ڈی) کے مطابق ملزم جیمز برونکس کا مقامی رہنے والا ہے۔اس کی شناختی دستاویزات میں فلاڈیلفیا اور ملواکی کے حالیہ پتے درج ہیں۔ وہ اس سے پہلے نیویارک میں نو مرتبہ اور نیو جرسی میں تین مرتبہ گرفتار ہوچکا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں