یمن: جنگجوؤں اورسکیورٹی فورسز میں جھڑپ؛دو کمانڈروں سمیت بارہ افراد ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

یمن کے جنوبی علاقے میں القاعدہ سے وابستہ ایک مشتبہ عسکریت پسند گروپ کی گرفتاری کے بعد ایک فوجی اڈے پر جھڑپ ہوئی ہے جس میں یمنی فورسز کے دو کمانڈروں سمیت بارہ افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

یمنی حکام نے بتایا کہ یہ لڑائی جمعہ کی رات صوبہ ضالع میں مقامی سکیورٹی بیلٹ فورس کے صدر دفتر میں ہوئی ہے۔یہ فورس یمن کے جنوبی صوبوں میں سرگرم عمل ہے۔

ملیشیا نے اطلاع دی کہ سکیورٹی بیلٹ کے ڈپٹی کمانڈر کرنل ولیدالضمی اور الضالع میں حکومت کے انسداد دہشت گردی یونٹ کے کمانڈرکرنل محمدالشوباقی جنگجوؤں کے ساتھ فائرنگ کے تبادلے میں ہلاک ہوگئے ہیں۔ اس نے مزید تفصیل پیش نہیں کی۔

سکیورٹی حکام کے مطابق قریباً ایک گھنٹے تک فائرنگ کا تبادلہ ہوا تھا۔فوجیوں نے القاعدہ کے مشتبہ عسکریت پسندوں سے اپنے ہتھیار حوالے کرنے کوکہا تھا مگرانھوں نے اس سے انکار کیا اور اس کے بجائے فوجیوں پرفائرنگ شروع کردی تھی۔

انھوں نے مزید بتایا کہ لڑائی میں آٹھ جنگجو اورسکیورٹی فورسز کے چاراہلکار ہلاک ہو گئے ہیں۔ان میں دونوں مذکورہ کمانڈر بھی شامل ہیں۔جنگجوؤں کے ساتھ فائرنگ کے تبادلے میں متعدد فوجی زخمی ہوگئے ہیں اور انھیں اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ القاعدہ اورداعش سے وابستہ افراد جنگ زدہ یمن کے متعدد علاقوں میں سرگرم ہیں اورانھوں نے گذشتہ برسوں کے دوران میں ملک میں جاری خانہ جنگی سے فائدہ اٹھاتے ہوئے بالخصوص جنوبی صوبوں میں اپنے مضبوط ٹھکانے بنا رکھے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں