حوثی باغی یمنی شہر تعز کا محاصرہ ختم کریں: سلامتی کونسل کا مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے حوثیوں سے یمن مں تعز کے راستے اور گزرگاہیں کھولنے اور شہر کی ناکہ بندی ختم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو گوٹیرس نے گزشتہ منگل کو کہا تھا کہ وہ تعز کے راستے کھلوانے کے لیے حوثیوں پر دباؤ ڈالیں گے اور یمن میں مکمل سیاسی تصفیے کے لیے ماحول سازگار بنوانے کی کوشش کریں گے۔ حوثیوں نے اس حوالے سے جو وعدے کیے ہوئے ہیں ان سے انہیں پورا کرایا جائے گا۔

یاد رہے کہ اقوام متحدہ کے ایلچی برائے یمن ہینس گرنڈبرگ نے جمعرات کو اعلان کیا تھا کہ فریقین جنگ بندی کے سمجھوتے میں مزید دو ماہ کی توسیع پر رضامند ہوگئے ہیں۔ توسیع پر عمل درآمد دو جون سے شروع ہوا ہے۔

ہینس گرنڈبرگ نے ایک بیان میں کہا تھا کہ ’گزشتہ دو مہینوں کے دوران یمن کے باشندوں نے جنگ بندی کے ٹھوس فوائد کا تجربہ کیا ہے۔‘

تجدید شدہ معاہدے سے تیل بردار جہازوں کو حوثیوں کے زیر قبضہ حدیدہ بندرگاہ اور کمرشل پروازوں کو دارالحکومت صنعا کے ہوائی اڈے سے اڑان بھرنے کی اجازت ملے گی، یہ علاقے حوثی گروپ کے زیر کنٹرول ہیں۔

یمن کے تمام فریقوں نے جنگ بندی کے سمجھوتے میں توسیع کی منظوری دی ہے۔ سمجھوتے پر عمل درآمد 2 اپریل 2022 کو شروع ہوا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں