اوپیک پلس لچکدار ہے،ضرورت پڑنے پرفیصلے تبدیل کرسکتا ہے: سعودی وزیرتوانائی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کے وزیر توانائی شہزادہ عبدالعزیز بن سلمان نے کہا ہے کہ اوپیک پلس کے فیصلے سیاسی نہیں بلکہ مارکیٹ کے بنیادی اصولوں پرمبنی ہیں۔

انھوں نے واضح کیا ہے کہ تیل پیدا کرنے والے ممالک پرمشتمل یہ اتحاد ضرورت کے مطابق پالیسی کو ایڈجسٹ کرنے کے لیے کافی لچکدار ہے۔

شہزادہ عبدالعزیز دارالحکومت الریاض میں میڈیا فورم سے خطاب کررہے تھے۔انھوں نےاوپیک پلس کے گذشتہ اکتوبر میں پیداواری ہدف میں 20 لاکھ بیرل یومیہ کمی کرنے کے فیصلے پرروشنی ڈالی۔

تیل برآمد کرنے والے ممالک کی تنظیم (اوپیک) اور روس سمیت اتحادیوں پر مشتمل گروپ نے 2023 کے آخر تک مارکیٹ میں استحکام کے لیے تیل کی یومیہ پیداوارمیں کٹوتی پراتفاق کیا تھا۔

شہزادہ عبدالعزیزنے گذشتہ ہفتے جریدے انرجی ایسپیکٹس میں شائع شدہ ایک انٹرویو میں اس بات کا اعادہ کیا تھا کہ یہ فیصلہ اختتامِ سال تک برقرار رہے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں