ایلون مسک کے امریکی صدر بننے کے امکان کو مسترد نہیں کرتا , پوتن کے اتحادی کا بیان

روسی سلامتی کونسل کے ڈپٹی چیئرمین دمتری میدویدیف کا کہنا ہے کہ ہم شاید ایک نئی عالمی جنگ کے دہانے پر ہیں۔

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سابق روسی صدر اور وزیراعظم اور روسی سلامتی کونسل کے نائب چیئرمین دمتری میدویدیف نے امریکا میں صدارتی انتخابات میں ایلون مسک کی جیت کے امکان کو مسترد نہیں کیا۔

میدیدیف نے آج، منگل، "نالج میراتھن" ایونٹ کے دوران کہا: "بہت سے لوگ ایلون مسک کا حوالہ امریکی صدارتی انتخاب کے لیے ایک نئے چہرے کے طور پر دے رہے ہیں۔

وہ شخصیت جو (ڈونلڈ) ٹرمپ اور (جو) بائیڈن سے کہیں زیادہ طاقت رکھتی ہے، جو امریکی صدارتی انتخابات جیت سکتی ہے، وہ افسانوی شخصیت ایلون (مسک) ہیں، اور یہ واقعات کے تسلسل میں ایک اہم عنصر ثابت ہو سکتا ہے۔"

میدیدیف نے آج منگل کو خبردار کیا کہ دنیا ایک نئی عالمی جنگ کے دہانے پر پہنچ سکتی ہے، اور ایٹمی تصادم کا امکان بھی بڑھ رہا ہے۔

اس سے قبل بھی ، روسی صدر ولادی میر پوتن کے اہم اتحادی میدیدیف نے ماسکو میں ایک کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ "دنیا انتشار کا شکار ہے اور بہت امکان ہے کہ ایک نئی عالمی جنگ کے دہانے پر ہے۔"

انہوں نے کہا کہ ایسی نئی عالمی جنگ ناگزیر نہیں ہے لیکن جوہری تصادم کے خطرات بڑھ رہے ہیں اور یہ موسمیاتی تبدیلی کے خدشات سے زیادہ سنگین ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں