سیف قذافی اور فوجی کمانڈر خلیفہ حفتر الیکشن لڑ سکتے ہیں: لیبی کمیٹی کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

لیبیا کی پارلیمنٹ اور سپریم کونسل آف سٹیٹ کے چھ ، چھ ارکان پر مشتمل خصوصی کمییٹی کے ذرائع نےاعلان کیا ہے کہ لیبیا کے مرحوم رہنما معمر قذافی کے بیٹے سیف الاسلام قذافی اور لیبیا کی قومی فوج کے کمانڈر خلیفہ حفتر اگلے سال کے شروع میں ہونے والے لیبیا کے صدارتی انتخابات میں حصہ لے سکتے ہیں۔

الحدث چینل نے اپنے ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ کمیٹی ’’ 6+6 ‘‘ سیف الاسلام قذافی اور خلیفہ حفتر کے آئندہ انتخابات میں حصہ لینے کے امکان کو مسترد نہیں کرتی۔

اس لیبی کمیٹی کا اجلاس مراکش کے شہر بوزنیکا میں ہوا تھا۔ اس اجلاس میں پارلیمان اور کونسل آف سٹیٹ کے درمیان انتخابات میں فوج کی شرکت کے حوالے سے اختلاف کے اہم ترین نکات پر اتفاق رائے ہو گیا۔ طے کیا گیا کہ الیکشن ہوں گے اور انتخابات میں حصہ لینے والے فوجی عہدیدار نہ جیتنے کی صورت میں واپس اپنی سروس جوائن کر سکیں گے۔

عدالتی فیصلے یا انصاف کے متلاشی افراد کی نامزدگی کی اجازت نہ دینے کا بھی فیصلہ کیا گیا تھا۔ کمیٹی نے اگلے انتخابات کی تاریخیں بھی طے کردی تھیں ۔ پارلیمانی انتخابات رواں برس دسمبر اور صدارتی الیکشن اگلے سال جنوری میں منعقد کرنے کا کہا گیا۔

کمیٹی نے انتخابات کے انعقاد کے لیے 6 ماہ کی مدت کے لیے ایک منی حکومت بنانے پر بھی اتفاق کیا جس میں توسیع نہیں کی جا سکتی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں