متحدہ عرب امارات: بلند وبالا عمارت میں لگی آگ پرقابو پالیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

متحدہ عرب امارات (یو اے ای) میں منگل کو علی الصباح ایک بلند و بالا رہائشی عمارت میں لگنے والی آگ پر قابو پالیا گیا ہے۔

متحدہ عرب امارات میں شامل سات امارتوں میں سے ایک عجمان میں آتش زدگی سے فوری طور پر کسی کے زخمی ہونے کی اطلاع نہیں ہے۔

اس کی فوٹیج میں دیکھا جا سکتا ہے کہ عمارت کا ایک کونا آگ کی لپیٹ میں ہے۔آگ زمین کی سطح سے اوپر تک پھیل رہی ہے اور ملبہ نیچے گلی میں گر رہا ہے۔بعد ازاں مقامی میڈیا ادارے عجمان نیوز نے بتایا کہ آگ پر قابو پا لیا گیا ہے۔

اس کے انسٹاگرام پر پوسٹ کی گئی فوٹیج میں عمارت کا بیرونی حصہ سیاہ اور نیچے سڑک پر فائر فائٹرز کو دکھایا گیا ہے۔

متحدہ عرب امارات کے حکام کی جانب سے فوری طور پر کوئی تبصرہ نہیں کیا گیا۔یواے ای میں حالیہ برسوں میں اسی طرح آگ لگنے کے کئی واقعات پیش آچکے ہیں۔ان کا تعلق کئی بلند و بالا عمارتوں پر آتش گیر چادروں اور تاروں کے بیرونی خول سے بتایا جاتا ہے۔

سنہ 2015ء میں نئے سال کے موقع پر دنیا کی بلند ترین فلک بوس عمارت دبئی میں واقع برج خلیفہ کے نزدیک ایک ہوٹل اور رہائشی کمپلیکس میں آگ بھڑک اٹھی تھی۔آتش زدگی کے اس واقعہ اوروہاں سے لوگوں کو نکالنے کے دوران میں 15 افراد زخمی ہوگئے تھے۔دبئی پولیس نے آگ لگنے کا ذمہ دار بجلی کی کھلی وائرنگ کو قرار دیا تھا۔

آتش زدگی کے اس واقعہ کے بعد یو اے ای میں بلندوبالا عمارتوں کے حفاظتی قواعد و ضوابط نافذ کیے گئے تھے۔ان میں یہ ہدایت کی گئی تھی کہ ایسی تمام عمارتوں میں بجلی کے تاروں کے بیرونی خول اور تہوں کو شعلوں کے خلاف مزاحمت کرنے والے مواد سے تبدیل کیا جائے۔

مقبول خبریں اہم خبریں