انقرہ دھماکہ: حملہ آوروں نے ویٹرنری ڈاکٹر کو قتل کرکے اس کی کار چھینی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

انقرہ میں اتوار کو وزارت داخلہ کی عمارتوں کو نشانہ بنانے والے خودکش حملے کے بارے میں نئی معلومات سامنے آئی ہیں۔ ترک حکومت کا کہنا ہے کہ دھماکے میں ایک حملہ آور مارا گیا جب کہ حکام نے دوسرے کو ہلاک کردیا ہے۔ اب نئی معلومات یہ آئی ہیں کہ انقرہ میں سکیورٹی ڈائریکٹوریٹ پر خودکش حملے میں استعمال ہونے والی گاڑی ایک جانوروں کے ڈاکٹر کی ملکیت تھی جسے حملہ آوروں نے قتل کردیا تھا۔

حملہ آوروں نے کار کے مالک میخائل بوزلوگن کو قتل کر دیا۔ بوزلوگن کا تعلق قیصری سے تھا اور وہ جانوروں کے ڈاکٹر تھے۔ حملہ آوروں نے کار کے مالک کو گولی ماری اور کار قبضہ میں لے کر انقرہ کی طرف چلے گئے۔ سیکورٹی فورسز کو ڈاکٹر کی لاش قیصری کے دوالی گاؤں کے مضافات میں ایک خالی میدان میں پڑی ہوئی ملی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں