مصر میں ایک شادی:چالیس ہزار مہمانوں کی شرکت،1300 کارکنوں نے مہمانوں کی خدمت انجام دیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

آئی ایم ایف سے اسی ہفتے قرضے کے معاہدے کے قریب پہنچنے والے ملک مصر میں ایک مصری کی شادی کی ہر دھوم مچ گئی ہے۔ پورا ہفتہ شادی کی تقریبات جاری رہیں چالیس ہزار مہناوں نے شرکت کی ہے۔ شادی کے انتظامات کےلیے 21 دن تک کام ہوتا رہا۔

غیر معمولی شہرت پانےوالی شادی کے خوش قسمت دولہے کا نام احمد بلال ہے۔ اس کی شادی کی تقریب اس مصر میں ہوئی ہے جہاں رفح کے پار ان دنوں آتش و آہن کی بارش ہے کہ دن رات برستی ہے اور ہرروز کبھی بیسیوں اور کبھی درجنوں فلسطینی بمباری کا نشانہ بنتے ہیں۔

احمد بلال جس مصری گورنریٹ کے رہائشی ہیں، اتفاق سے وہ اس تباہ حال ملک سے جڑاہوا ہے جسے اب تباہ حالی کے حوالے سے یاد کیا جاتا ہے اور وہ ملک لیبیا ہے۔

تاہم یہ اپنی جگہ اہم بات ہے کہ شادی کی کئی روزہ تقریبات میں شرکت کرنےوالے شہری محمود اے سیوا نے کہا ہے کہ یہ ہماری قبائلی روایت ہے کہ شادی کی تقریبات کئی کئی دن جاری رہتی ہیں اور مہمانوں کی تواضع کے لیے بچھڑے اور بھیڑیں ذبح کی جاتی ہیں۔

محمود کے مطابق ہمارے اس نخلستان میں آباد قبیلے کے لوگ شرکت کرتے ہیں اس کے علاوہ باہر سے بھی ہمارے مہمان آتے ہیں اور پورے علاقے سیوا میں جشن کا سماں ہوتا ہے۔

احمد بلال نامی دولہے کی شادی کی تقریبات کی تیاری 21 دنوں تک جاری رہی۔ اس دوران بھیڑوں اور دنبوں کے گوشت سے تیار کیے گئے کھانوں کے علاوہ بہت سارے دیگر کھانے اور لوازمات کا بھی مہمانوں کے لیے بندو بست کیا جاتا ہے۔

ستر سالہ مصطفیٰ اسی علاقے کے بزرگ رہائشی ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ ہمارے علاقے کی روایت ہے کہ شادی کی تقریبات سات دنوں اور سات راتوں تک جاری رہتی ہیں۔ رنگا رنگ قسم کے روایتی خیمے لگائے جاتے ہیں۔ سجاوٹ کی جاتی ہے۔ خاندان کے لوگ اور رشتہ دار مسلسل تقریبات کا حصہ بنتے ہیں۔ یہ تقریبات مصر کے علاوہ لبیا اور سعودی عرب سے آنےوالے مہمانوں کے لیے بھی بڑی پر لطف ہوتی ہیں۔

احمد بلال کی تقریب شادی میں متروح کے گورنرمیجر جنرل خالد شعیب کے علاوہ ان کے نائبین، اعلی سرکاری حکام، شیوخ، زعماء اور قبائیلی عمائدین کے ساتھ ساتھ نوجوانوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

مہمان نوازی کے حوالے سے یاد رکھی جانےوالی شادی میں مہمانوں کے لیے کھانے بنانے کی خاطر 50 باورچیوں نے خدمات انجام دیں، 750 ویٹرز نے کھانا پیش کرنے کی ذمہ داری انجام دی، 200 کارکنوں نے چائے، کافی اور ٹھنڈے مشروبات کی تیاری کا کام کیا۔ جبکہ 300 کارکنوں نےمہمانوں کے سامنے پھل پیش کرنے کی خدمت انجام دی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں