فلسطین اسرائیل تنازع

فرانس کی اسرائیل کو غزہ میں استعمال کے لیے ہتھیار فراہم کرنے کی تردید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فرانس کے وزیرِ دفاع نے منگل کے روز تحقیقاتی صحافیوں کے ان الزامات کی تردید کی ہے کہ غزہ کی مہم میں اسرائیلی فوج کی طرف سے استعمال ہونے والے گولہ بارود کے اجزاء فرانس نے فراہم کیے تھے۔

تحقیقاتی ویب سائٹس ڈسکلوز اور مارسیکٹو نے لکھا، "مارسیل میں قائم فرم یورو لنکس نے اسرائیل کو ایم 27 لنکس اور مشین گنوں کے لیے گولہ بارود کی بیلٹ میں رائفل کارتوس کو جوڑنے کے لیے استعمال ہونے والے دھاتی ٹکڑے فروخت کیے تھے۔"

انہوں نے دعویٰ کیا، اس طرح کا گولہ بارود "غزہ کی پٹی میں شہریوں کے خلاف استعمال کیا جا سکتا تھا۔"

تحقیقاتی اداروں کی رپورٹنگ کی تائید اُن لنکس کی تصاویر سے ہوئی جو ان کے مطابق حماس کے سات اکتوبر کے خونریز حملے کے ہفتوں بعد 23 اکتوبر کو لی گئی تھیں۔

اے ایف پی اطلاع کردہ ترسیل کی تصدیق کرنے سے قاصر تھا۔

لیکن وزیرِ دفاع سیبسٹین لیکورنو نے پیرس میں صحافیوں کو بتایا کہ یورو لنکس کا اسرائیلی فرم آئی ایم آئی سسٹم کو سامان برآمد کرنے کا لائسنس اسرائیلی فوج کے استعمال کے بجائے "صرف تیسرے ممالک کو دوبارہ برآمد کا احاطہ کرتا ہے"۔

بائیں بازو کے کارکنان نے فرانس سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ کینیڈا کی مثال پر عمل کرے اور اسرائیل کو ہتھیاروں کی تمام برآمدات بند کر دے۔

فرانس انبوڈ (ایل ایف آئی) اپوزیشن پارٹی کے رہنما ایم پی میتھیلڈ پینوٹ نے برآمدات کو ایک "بڑے پیمانے کا اسکینڈل" قرار دیتے ہوئے حالیہ پارلیمانی سماعت میں لیکورنو پر "جھوٹ بولنے" کا الزام لگایا۔

وزیر نے گذشتہ ماہ قومی اسمبلی کے ایوانِ زیریں کی دفاعی کمیٹی کو بتایا تھا کہ اسرائیل کے لیے ہتھیاروں سے متعلق فرانس کی پالیسی "ناقابلِ مذمت" تھی جس کی حالیہ ترسیل میں "بال بیرنگ، گلاس، کولنگ سسٹم" اور سینسر جیسی اشیاء شامل تھیں۔

انہوں نے اس وقت مزید کہا، "عمومی طور پر یہ اسلحہ اسرائیل سے دوسرے صارفین کو دوبارہ برآمد کرنے کا منصوبہ ہوتا ہے۔"

لیکورنو نے کہا کہ انہوں نے سرکاری ملازمین کو حکم دیا ہے کہ وہ سات اکتوبر سے اسرائیل کو برآمدات کی جانچ پڑتال میں "مزید سختی" کا مظاہرہ کریں۔

انہوں نے تسلیم کیا کہ فرانس نے اسرائیل کے "آئرن ڈوم" میزائل دفاعی سسٹم کے پرزہ جات کے لیے ضرور لائسنس جاری کیے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں