’اسرائیل کو ایرانی حملوں سے گزند پہنچا تو امریکہ جنگ میں شامل ہونے پر مجبور جائے گا ’

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی صدر جو بائیڈنن نے انتباہ کیا ہے ایرانی حملوں سے اسرائیل کو کچھ نقصان پہنچا تو امریکہ کو مشرق وسطی میں اس وسیع ہوتی چلی جانے والی جنگ کا براہ راست حصہ بننا پڑے گا۔

جو بائیڈن نے یہ دھمکی اسرائیل پر پہلے ایرانی حملے کے بعد دی ہے۔ ایران کے حملے ہفتے کے روز سامنے آئے تھے۔ اس سے قبل اسرائیل نے دمشق میں ایرانی قونصل خانے کا نشانہ بنایا تھا۔ جس کا ایران نے اسرائیل کو جواب دینے کی کوشش کی تھی۔

صدر بائیڈن کی طرف سے یہ انتباہ وال سٹریٹ جرنل میں سامنے آیا ہے۔ امریکی صدر ان دنوں کوشش کر رہے ہیں کہ اسرائیل اور یوکرین کے لئے امریکی فوجی امداد کی فوری اور تیزی سے فراہمی کے لئے امریکی قانون ساز قانون سازی کریں۔

جو بائیڈن کے مطابق یہ وقت نہیں ہے کہ ہم اپنے دوستوں کا ختم ہونے دیں اس لئے ضروری ہے کہ ایوان نمائندگان فوری طور پر سلامتی امور کے لئے یوکرین اور اسرائیل کے لئے فوجی امداد کی منظوری دیں۔ اسی طرح غزہ میں انسانی بنیادوں پر امدادی سرگرمیوں کو مؤثر بنانے کے لئے کردار ادا کیا جائے۔

واضح رہے امریکی ریپبلکن اور ڈیموکریٹس ارکان کانگریس کئی مہینوں سے اس امدادی پیکج پر باہم جھگڑ رہے ہیں۔ بعض ڈیمو کریٹ ارکان کانگریس اسرائیل کے لئے امریکہ غیر مشروط امداد کیوں دیے جانے پر سوال اٹھا رہے ہیں۔

امریکی صدر کا کہنا ہے کہ اگر ایران اسرائیل پر حملے میں کامیاب ہو گیا تو امریکہ کو اس جنگ میں کودنے پر مجبور جائے گا۔ ان کا کہنا تھا یوکرین اور اسرائیل اپنے دفاع اور خود مختاری کی اہلیت رکھتے ہیں مگر وہ امریکی مدد کی پر بڑا انحصار کرتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں