استنبول میں ترک شیف نصرت کے ریسٹورنٹ پر مسلح حملہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ترکیہ کے شیف نصرت گوکچے اپنے خلاف ملازمین کے ساتھ بدسلوکی اور توہین کرنے کے الزامات کے بعد دوبارہ سوشل میڈیا پر توجہ کا مرکز ہیں۔ تاہم اس بار ان کے ہوٹل پر حملہ عوامی حلقوں کی توجہ کا مرکز بنا ہوا ہے۔

تفصیلات کے مطابق شیف نصرت جو اپنے تیار کردہ گوشت پر نمک چھڑکنے کے متجسس انداز کی وجہ سے اپنی عرفیت "ماسٹر آف سالٹ" کے لقب سے مشہور ہیں کے ریسٹورنٹ پر مسلح حملہ کیا گیا۔ دو موٹر سائیکل سواروں نے ریستوراں پر فائرنگ کر دی۔

یہ حملہ شاہراہ إٹيلير نيسپيٹي پر واقع ریستوران پر کیا گیا تاہم اس حملے میں کسی قسم کا جانی نقصان نہیں ہوا۔ دو نامعلوم افراد نے ریسٹورنٹ پر فائرنگ کی اور پھر فرار ہو گئے۔

رپورٹ کے بعد پولیس کی ایک ٹیم جائے وقوعہ پر پہنچی۔ ترک ویب سائٹس کے مطابق پولیس نے ہوٹل کےباہر لگے کیمروں کی ریکارڈنگ قبضے میہں لے کر ان کی چھان بین شروع کی ہے۔ ریکارڈنگ میں دونوں حملہ آوروں کو ہیلمٹ پہنے ہوئے دکھایا گیا ہے

قابل ذکر ہے کہ یہ پہلا موقع نہیں ہے کہ شیف نصرت کو اس حملے کا سامنا کرنا پڑا ہے، کیونکہ اس سے قبل ان کے ریسٹورنٹ پر جو سٹیکس پیش کرتا ہےپر رواں سال 21 مارچ کو بھی اسی طرح حملہ کیا گیا تھا، جب موٹر سائیکل پر سوار دو افراد نے اس پر فائرنگ کی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں